لاس اینجلس میں سجا گولڈن گلوب ایوارڈز کا میلہ، فنکاروں کی سیاہ لباس میں شرکت

لاس اینجلس میں 75 ویں گولڈن گلوب ایوارڈز کی تقریب میں فلمی ستاروں کی کہکشاں سجائی گئی۔

تاہم کیلیفورنیا کے فیشن ڈسٹرکٹ بیورلے ہزلز میں منعقدہ تقریب کا ریڈ کارپٹ اُس وقت ‘سیاہ کارپٹ’ میں بدل گیا، جب جنسی ہراساں کیے جانے کے خلاف مہم سے اظہارِ یکجہتی کے لیے بہت سے فلمی ستاروں نے سیاہ کپڑوں میں شرکت کی۔

واضح رہے کہ ہالی وڈ سے تعلق رکھنے والے 3 سو سے زائد اداکاروں، ڈائریکٹرز، رائٹرز اور دیگر افراد نے ‘ٹائمز اپ’ کے نام سے مہم شروع کر رکھی ہے، جس کا مقصد دوران ملازمت خاص طور پر خواتین کو جنسی طور پر ہراساں کیے جانے کے مسئلے کو اجاگر کرنا ہے۔

گولڈن گلوب ایوارڈز میں ‘بگ لٹل لائیز’ نے بہترین فلم کا اعزاز حاصل کیا، اسی فلم کے لیے بہترین فنکارہ کا ایوارڈ نکول کڈمین کو دیا گیا۔

ٹیلی وژن سیریز ‘دی ہینڈ میڈز ٹیل ‘نے ‘گیم آف تھرونز’ اور ‘اسٹرینجز تھنگز’ کو مات دے دی۔

الزبتھ موز نے ٹی وی سیریز ‘ہینڈ میڈز ٹیل’ کے لیے بہترین ٹی وی اداکارہ کا ایوارڈ اور راشیل بروسنیہن نے ‘مسز میسل’ کے لیے بہترین اداکار کا اعزاز اپنے نام کیا۔

ڈرامہ مووی کی کیٹگری میں ‘تھری بل بورڈز آؤٹ سائیڈ ایبنگ، مزوری’ بہترین فلم قرار پائی، اسی فلم کے لیے فرینسز مک ڈورمنڈ نے بہترین اداکارہ کا ایوارڈ جیتا جبکہ گیری اولڈمین ‘ڈارکیسٹ آر’ کے لیے بہترین اداکار رہے۔

دوسری جانب بہترین اینیمیٹڈ مووی موشن پکچرز کی ‘کوکو’ قرار پائی۔

ٹی وی کے لیے بہترین مزاحیہ اداکار کا میدان مسلمان اسٹینڈ اپ کامیڈین عزیز انصاری نے مار لیا۔

ایوارڈ تقریب میں میزبان سیٹھ میئرس نے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ، ہالی وڈ پروڈیوسر ہاروی وائن اسٹین اور اداکار کیون اسپیسی پر طنز کے تیر برسادیئے۔

دوسری جانب ٹی وی میزبان اوپرا ونفرے پہلی سیاہ فام خاتون ٹھہریں جنہیں ان کی لائف ٹائم خدمات کے لیے سیسل بی ڈی ملی ایوارڈ (Cecil B. DeMille award) کے اعزاز سے نواز گیا۔

منتظمین ‘ہالی وڈ فارن پریس ایسوسی ایشن’ نے آزادی صحافت کے فروغ لیے 2 ملین (20 لاکھ) ڈالر عطیے کا اعلان بھی کیا۔


اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.