ڈومیسٹک ون ڈے کپ کا میچ نہ کھیل کر کامران اکمل، سلمان بٹ کا خاموش احتجاج

انگلینڈ سے آئے ہوئے کھلاڑی میسم حسین کو کھلانے پر وکٹ کیپر کامران اکمل اور سابق کپتان سلمان بٹ نے ڈومیسٹک ون ڈے کپ کا میچ نہ کھیل کر خاموش احتجاج کیا۔

محکموں کی ٹیموں کے ون ڈے کپ میں اتوار کو یو بی ایل اسپورٹس کمپلیکس کراچی پر میزبان ٹیم اور واپڈا کے میچ میں شان مسعود کی قیادت میں کھیلنے والی یو بی ایل نے با آسانی 8وکٹ سے کامیابی حاصل کر لی۔

اس میچ میں واپڈا کو تین ٹیسٹ کرکڑز اور اہم کھلاڑیوں کپتان سلمان بٹ، وکٹ کیپر کامران اکمل اور فاسٹ بولر وہاب ریاض کی خدمات حاصل نہیں تھیں۔

وہاب ریاض کے بارے میں خبریں ہیں کہ وہ لاہور گھر گئے ہوئے ہیں اور آئندہ میچوں کے لئے دستیاب ہوں گے جب کہ میچ کے دوران اسٹیڈیم میں یہ باتیں زبان زد عام تھیں کہ کپتان سلمان بٹ اور وکٹ کیپر کامران اکمل جو دوران میچ باقاعدہ کٹ پہن کر اسٹیڈیم میں موجود تھے،بطور احتجاج میچ میں شریک نہیں ہوئے۔

دونوں کا احتجاج انگلینڈ سے آئے ہوئے 22سال کے میسم حسین کو کھلانے پر سامنے آیا،جنھیں 28دسمبر 2017ء کو سوئی سدرن گیس کے خلاف میچ کھلانے کے بعد اگلے چار میچوں کی لائن اپ میں شامل نہیں کیا گیا تھا۔

میسم حسین جنھیں یو بی ایل کے خلاف موقع دیا گیا، بطور اوپنر وہ پانچ رنز بنا کر آوٹ ہوئے جبکہ چار اوورز میں لیگ بریک گگلی بولر نے 4اوورز میں 51رنز دئیے۔

حیران کن طور پر سلمان بٹ کی جگہ قیادت کرنے والے خالد عثمان نے میسم حسین سے ایسے وقت میں بولنگ جاری رکھی،جب انھیں صہیب مقصود آزادانہ انداز میں چھکے لگا رہے تھے۔

میچ کے بعد گفتگو کرتے ہوئے وکٹ کیپر کامران اکمل نے  گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ یہ تاثر غلط ہے کہ انہوں نے اور سلمان بٹ نے میسم حسین کے گیارہ کھلاڑیوں میں شامل ہونے پر یو بی ایل کا میچ نہیں کھیلا۔دوسری جانب واپڈا کے مینجر امجد حسین نے بھی یہی موقف اختیار کیا۔

جب واپڈا کے لیفٹنینٹ جنرل (ر) مزمل حسین سے رابطہ کیا تو انہوں نے ٹیم کی شکست پر افسوس کا اظہار کیا اور کپتان سلمان بٹ اور وکٹ کیپر کامران اکمل کے احتجاج کی خبر پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ اسپورٹس مین کے یہی مسائل رہتے ہیں، تب ہی پاکستان میں کھیلوں کا یہ حال ہے۔

تاہم انہوں نے اس بات کو ماننے سے صاف انکار کیا کہ ان کے دباؤ پر میسم حسین کو ٹیم میں شامل کیا۔

واپڈا کے چئیرمین نے مکمل طور پر اس واقعے سے لاعلمی کا اظہار کرتے ہوئے مستقبل میں ٹیم کے معاملات کا نوٹس لینے کا عزم کیا۔

جس میسم حسین کو ٹیم میں شامل کرنے پر کامران اکمل اور سلمان بٹ کے احتجاج کی خبریں گرم ہیں، اطلاعات ہیں کہ وہ میسم حسین وفاقی وزیر کھیل ریاض پیرزادہ کے بھانجے ہیں۔


اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.