Daily Taqat

نیوزی لینڈ نے گزشتہ سال اچانک دورہ ختم کرنے پر پی سی بی کو معاوضہ ادا کردیا

کراچی: نیوزی لینڈ کرکٹ بورڈ نے پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) نے گزشتہ سال ستمبر 2021 میں اچانک دورہ ختم کرنے پر معاوضہ ادا کردیا۔

نیوزی لینڈ نے غلطی کا ازالہ کرتے ہوئے دورہ پاکستان ختم کرنے پر پی سی بی کو زرتلافی ادا کر دیا، گوکہ اصل رقم ظاہر نہیں کی گئی مگر یہ کئی ملین ڈالر ہے، کیویز آئندہ برس مئی میں اضافی 10وائٹ بال میچز کےلیے بھی ٹور کریں گے۔

اس میں 5 ون ڈے اور اتنے ہی ٹی ٹوئنٹی شامل ہیں،بورڈ کو اس سے بھی بھاری منافع ہوگا۔ دونوں بورڈز کے تعلقات میں ماضی جیسی گرم جوشی واپس آ چکی، اسی لیے پاکستان اکتوبر میں کرائسٹ چرچ میں ٹرائنگولر سیریز میں شرکت کی دعوت قبول کرنے کا ذہن بنا چکا۔
ایشیا کپ کے بعد ستمبر،اکتوبر میں انگلینڈ سے 7 ٹی ٹوئنٹی انٹرنیشنل میچز پر مشتمل ہوم سیریز کا شیڈول طے ہونے پر نیوزی لینڈ کو دورے کی تصدیق کر دی جائے گی۔

تفصیلات کے مطابق گذشتہ برس ستمبر میں کیوی کرکٹ ٹیم 3ون ڈے اور 5 ٹی ٹوئنٹی میچز پر مشتمل سیریز میں شرکت کےلیے پاکستان آئی تھی، مگر جس دن راولپنڈی میں پہلا ون ڈے ہونا تھا مہمان ٹیم نے ناقابل بھروسہ سیکیورٹی خدشات کو جواز بنا کر وطن واپسی کا اعلان کر دیا،اس وقت کے وزیر اعظم عمران خان کی اپنی ہم منصب جیسنڈا آرڈرن کو فون کال بھی کیویز کو نہ روک پائی، یوں 18 سال بعد نیوزی لینڈ کی ٹیم کو پاکستان میں کھیلتے دیکھنے کا شائقین کا ارمان پھر ادھورا رہ گیا۔

اس کے بعد انگلینڈ نے بھی اپنا ٹور ملتوی کر دیا تھا، چیئرمین پی سی بی رمیز راجہ نے اس وقت اعلان کیا تھا کہ نیوزی لینڈ سے زرتلافی وصول کیا جائے گا، اس حوالے سے آئی سی سی میں بھی جانے کی ضرورت پڑی تو گریز نہیں کریں گے،ذرائع کا کہنا ہے کہ یہ معاملہ حل ہو چکا،کونسل کے پاس جانے کی ضرورت نہیں پڑی اور نیوزی لینڈ کرکٹ نے پاکستان کو زرتلافی کی رقم ادا کر دی جو کئی ملین ڈالر ہے۔

پی سی بی کو ہوٹل بکنگ، سیکیورٹی، مارکیٹنگ،براڈ کاسٹ و دیگر مد میں کروڑوں روپے کا مالی نقصان ہوا تھا جس کی تفصیل کیویز کوبھیجی گئی، انھیں بعد میں خود اندازہ ہو گیا کہ دھمکی قابل بھروسہ نہیں تھی اور ٹور ختم نہیں کرنا چاہیے تھا، لہذا پاکستان کا غصہ ٹھنڈا کرنے کےلیے مئی 2023 میں 10 اضافی وائٹ بال میچز کےلیے دورے پر آمادگی ظاہر کر دی جس میں 5 ون ڈے اور اتنے ہی ٹی ٹوئنٹی شامل ہیں۔

اس سے پی سی بی کو خاصا مالی فائدہ ہوگا، دونوں بورڈز کے درمیان تعلقات میں جو دراڑ آئی تھی وہ اب ختم ہو چکی اور ماضی جیسی گرم جوشی لوٹ آئی ہے،ذرائع نے مزید بتایا کہ پاکستان اکتوبر میں کرائسٹ چرچ میں ٹرائنگولر سیریز میں شرکت کا ذہن بنا چکا، ستمبر،اکتوبر میں انگلینڈ کے خلاف 7 ٹی ٹوئنٹی میچز پر مشتمل ہوم سیریز کا شیڈول طے ہونے کے بعد نیوزی لینڈ کو دورے کی تصدیق کر دی جائے گی۔

ایونٹ میں بنگلہ دیشی ٹیم بھی شریک ہوگی،پاکستان سے گرین سگنل ملنے پر کیویز ٹرائنگولر سیریز کا شیڈول جاری کر دیں گے، یکم سے 17 ستمبر تک گرین شرٹس کو کولمبو میں ایشیا کپ میں بھی حصہ لینا ہے مگر سری لنکا کے خراب حالات نے ایونٹ پر سوالیہ نشان عائد کیے ہوئے ہیں۔دوسری جانب رابطے پر پی سی بی کے ترجمان نے تصدیق کی کہ دورہ ادھورا چھوڑ کر جانے پر نیوزی لینڈ کرکٹ کی جانب سے پاکستان کو زرتلافی کی ادائیگی کر دی گئی، البتہ انھوں نے رقم کی تفصیل بتانے سے گریز کیا،ایشیا کپ کے حوالے سے سوال پر انھوں نے کہا کہ ہمیں اس حوالے سے کوئی اپ ڈیٹ نہیں ملی، ایشین کرکٹ کونسل ہی ایونٹ کا فیصلہ کرے گی۔

یاد رہے کہ بلیک کیپس نے 17 ستمبر 2021 کو راولپنڈی میں پہلے ون ڈے کے آغاز سے عین قبل سیکیورٹی خدشات کا حوالہ دیتے ہوئے وطن روانگی کا اعلان کیا تھا جس کے بعد دونوں بورڈز کے روابط میں کشیدگی رونما ہوئی تھی۔

بعد ازاں انگلینڈ نے بھی اپنی مرد اور خواتین ٹیمیں پاکستان بھیجنے سے دستبردار ہوگئے تھے، پی سی بی کے چیئرمین رمیز راجا نے اعلان کیا کہ وہ نیوزی لینڈ سے ہرجانہ ادا کرنے کو کہیں گے۔


Get real time updates directly on you device, subscribe now.

اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

Translate »