جوہانسبرگ ٹیسٹ: آملہ اور ایلگر بھارتی بولرز کے سامنے ڈٹ گئے

جنوبی افریقا اور بھارت کے درمیان کھیلے جا رہے تیسرے ٹیسٹ کے چوتھے روز کا کھیل کاغاز ہو چکا ہے اور جنوبی افریقی بلے باز ڈین ایلگر اور ہاشم آملہ بھارتی بولرز کے سامنے ڈٹ گئے ہیں۔

بھارتی ٹیم ان دنوں جنوبی افریقا کے دورے پر ہے جہاں دونوں ٹیموں کے درمیان جوہانسبرگ میں تیسرا ٹیسٹ کھیلا جا رہا ہے۔

تیسرے روز کا کھیل خراب وکٹ کے باعث مقررہ وقت سے پہلے ختم کر دیا گیا تھا تاہم چوتھے روز  کھیل کے آغاز ہی سے جنوبی افریقی بلے باز ایلگر اور آملہ بھارتی بولنگ لائن کے سامنے ڈٹ گئے اور دونوں کے درمیان 100 سے زائد رنز کی شراکت ہو چکی ہے۔

خراب وکٹ کے باعث کھیل روک دیا گیا

تیسرے ٹیسٹ کے لیے تیار کی گئی وکٹ ابتداء ہی سے خطرناک دکھائی دے رہی تھی اور میچ کے ابتدائی تین روز میں 31 کھلاڑی آؤٹ ہو کر پویلین لوٹے۔

بھارتی ٹیم کے کپتان ویرات کوہلی نے ٹاس جیت پہلے خود کھیلنے کا فیصلہ کیا اور پوری ٹیم 187 رنز ہی بنا پائی جب کہ جواب میں جنوبی افریقا کی ٹیم بھی پہلی اننگز میں 194 رنز سے آگے نہ بڑھ سکی۔

بھارت نے اپنی دوسری اننگز کا آغاز کیا تو وکٹ میں توقعات سے زیادہ باؤنس نظر آنے لگا اور اننگز کے دوران متعدد بار گیند کھلاڑیوں کو بھی لگی تاہم خوش قسمتی سے کوئی بھی کھلاڑی غیرمعمولی زخمی نہیں ہوا۔

جنوبی افریقا نے بھارت کی جانب سے دیے گئے 241 رنز کے ہدف کے تعاقب میں اپنی دوسری اننگز کا آغاز کیا تو میزبان ٹیم کو بھی خراب وکٹ کی وجہ سے اچانک سے اٹھنے والی خطرناک بالز کا سامنا کرنا پڑا۔

جنوبی افریقا نے 8.3 اوورز میں ایک وکٹ کے نقصان پر 17 رنز بنائے تھے کہ جسپریت بھمراہ کی گڈ لینتھ پر آتی بال اچانک سے ڈین ایلگر کے ہیلمٹ پر لگی جس کے باعث امپائر کو کچھ دیر کے لیے کھیل روکنا پڑا۔

بعد ازاں میچ ریفری اینڈی پیکروفٹ نے آج کے دن کا کھیل ختم ہونے سے پہلے ہی میچ ختم کرنے کا اعلان کر دیا۔

خیال رہے کہ جنوبی افریقا اور بھارت کے درمیان 3 ٹیسٹ میچوں کی سیریز میں میزبان پروٹیز کو 2 صفر کی فیصلہ کن برتری حاصل ہے۔


اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.