پاکستانی طلبہ کا کارنامہ، ڈیٹا ٹرانسفر کا نیا طریقہ ڈھونڈ نکالا

اسلام آباد : پاکستانی طلبہ ٹیکنالوجی میں کسی سے پیچھے نہیں، انٹرنیٹ کے بغیر روشنی کی مدد سے ڈیٹا ٹرانسفر کرنے کا نیا طریقہ ایجاد کرلیا۔

دو کمپیوٹر آمنے سامنے، نہ انٹرنیٹ نہ کوئی کیبل، صرف سینڈر اور ریسور کے طور پر 2 ڈیوائس، ادھر روشنی جلی اور ادھر ڈیٹا ٹرانسفر۔ اسلام آباد کے طلباء نے 6 ماہ میں لائٹ کے ذریعے کمیونیکیشن کا نیا سسٹم تیار کرلیا۔

پراجیکٹ پر کام کرنیوالے مومنہ، ولید اور شہروز اس ون وے کمیونیکشن کو ٹو وے بنانے کا عزم رکھتے ہیں، اگر حکومت سرپرستی کرے تو یہ باصلاحیت نوجوان آئی ٹی کی دنیا میں تہلکہ مچا سکتے ہیں


اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.