اہم خبرِیں
انوپم کھیر کا خاندان بھی کورونا وائرس کا شکار فیصل واوڈا نے کے الیکٹرک سے متعلق بلاول بھٹو کی رپورٹ کو کرپشن... چین میں طوفانی بارشوں کے باعث بدترین سیلابی صورتحال پیدا گوگل کا بھارت میں 10 ارب ڈالر کی سرمایہ کاری کرنے کا اعلان ’ارطغرل غازی‘ کی حلیمہ سلطان کو کیو موبائل نے اشتہار کیلئے منت... احسن اقبال کی نیب کو وزیر اعظم کے خلاف ریفرنس دائر کرنے کی د... ہوٹل کی7 ویں منزل سے گرنے والے شخص کی بالکونی میں دوسرے شخص سے... اسلام آباد ہائیکورٹ نے آن لائن پب جی گیم پر پابندی کےخلاف درخو... افغانستان سے پاکستان چرس کی بڑی کھیپ کی اسمگلنگ کی کوشش ناکام سیاست سے دور جہانگیر ترین ان دنوں کہاں؟ لاہور سمیت پنجاب کے چھوٹے بڑے شہروں میں بجلی کی آنکھ مچولی جا... حکومت کو شوگر ملز کے خلاف کارروائی کی اجازت، سپریم کورٹ دودھ کی قیمتوں میں مزید اضافے کا عندیہ بن قاسم پاور پلانٹ میں تکنیکی خرابی کا دعویٰ ،کے الیکٹرک 45 سالہ شخص کی 6 سالہ بچی سے زیادتی شوگر ملز ایسوسی ایشن سے جہانگیر ترین گروپ کا خاتمہ کووڈ-19 کی ٹیم کے کپتان کی حیثیت سے خدمات انجام دینے پرپاکستان... سی ٹی ڈی کی کاروائی پر کالعدم تنظیم کے تین دہشت گرد گرفتار پنجاب میں لوڈ شیڈنگ کا سلسلہ جاری یواے ای کا مریخ پرروانہ ہونیوالا مشن ملتوی

چینی ہیکرز کا حملہ، اسرائیلی میزائل سسٹم کا ڈیٹا چرا لیا

چینی ہیکرز کا حملہ، اسرائیلی میزائل سسٹم کا ڈیٹا چرا لیا

نیو یارک: (ویب ڈیسک) ٹیکنالوجی میں دنیا بھر میں اپنی دھاک بیٹھانے والے ملک چین کے ہیکرز نے اسرائیل کے دفاعی میزائل سسٹم کو ہیک کر کے اس کا ڈیٹا چرا لیا۔

Image result for chinese hacker

 چینی ہیکروں نے آئرن ڈوم سے متعلق ڈیٹا اسرائیلی عسکری ٹیکنالوجی کی کمپنیوں کے کمپیوٹروں سے چُرایا۔ یہ ڈیٹا ایرو 3 میزائلوں، فضائی آلات، بیلسٹک میزائلوں اور اسی شعبے میں ٹیکنالوجی کی دستاویزات سے متعلق ہے۔

امریکی جریدے نے استفسار کیا ہے کہ سوال یہ ہے کہ چین اسرائیلی آئرن ڈوم کے بارے میں حاصل ہونے والی اس معلومات کا کیا کرے گا؟

سائبر سکیورٹی سے متعلق لکھاری برائن کریبس کا کہنا ہے کہ امریکی ریاست میری لینڈ میں واقع کمپنی سائبر انجینئرنگ سروس نے چینی ہیکروں کی کارروائی کا پتہ چلایا۔ کارروائی 10 اکتوبر 2011ء سے 13 اگست 2012ء کے درمیانی عرصے میں عمل میں آئی۔ اسرائیل میں دفاعی ٹکنالوجی کی تین بڑی کمپنیوں کے کمپیوٹر نیٹ ورکس کو ہیک کیا گیا۔

برائن کا مزید کہنا تھا کہ انکے خیال میں سائبر حملے کے مرتکب ہیکروں کی فنڈنگ چینی فوج نے کی۔ ریاست ورجینیا میں مینڈینٹ سائبر سیکورٹی کمپنی کے مطابق ہیکروں کا گروپ پیپلز آرمی کے جنرل سٹاف کے سیکنڈ بیورو کے زیر قیادت کام کرتا ہے۔ یہ یونٹ 61398 کے نام سے جانا جاتا ہے۔

رپورٹ کے مطابق یہ یونٹ امریکی رازوں کو چرانے کے واسطے بھرپور مہم میں مصروف ہے۔ امریکی وزارت انصاف نے گزشتہ برس مئی میں اس یونٹ کے چار مبینہ ارکان کو قانونی طور پر قصور وار ٹھہرایا تھا۔

دوسری طرف صیہونی حکام کو اس بات کا بھی خطرہ لگ گیا ہے کہ جنرل قاسم سلیمانی کی ہلاکت کے بعد ایران اسرائیلی اور امریکا پر حملہ کرنے کے لیے چین کی مدد حاصل کر سکتا ہے۔


Get real time updates directly on you device, subscribe now.

اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.