Daily Taqat

چوہدری نثار کی پریس کانفرنس کی اصل وجہ کیا ہے: حامد میر

سینئر صحافی و تجزیہ کار حامد میر نے کہا ہے کہ مشاہد حسین سید کی مسلم لیگ (ن) میں شمولیت کے باعث بہت سے لوگ نظر انداز ہوئے ہیں اورناراض ایم پی ایز کے گروپس بن گئے ہیں جن کی اسلام آباد، لاہور اور ملتان میں میٹنگز ہوئی ہیں اور چوہدری نثار کو اس کا پتہ چل گیا ہے۔

حامد میر نے کہا کہ ”چوہدری نثار کو شاہد خاقان عباسی کی گفتگو سے اندازہ ہو گیا ہے کہ پارٹی کے اندر جوڑ توڑ عروج پر پہنچا ہوا ہے۔ سینیٹ کے الیکشن میں پنجاب میں پیپلز پارٹی نے ایک نہیں، دو نہیں بلکہ تین امیدوار نامزد کئے ہیں جبکہ پی ٹی آئی کے چوہدری سرور بھی میدان میں ہیں اور مسلم لیگ (ق) کے ایک امیدوار بھی میدان میں آ گئے ہیں۔
پیپلز پارٹی اور ق لیگ کے پاس چھ، چھ یا سات، سات ووٹ ہیں تو وہ کیسے 36 یا 37 ووٹ پورے کریں گے۔ چکر یہ ہے کہ مسلم لیگ (ن) کے ناراض ایم این ایز جن کی تعداد کافی زیادہ ہے، ان کے نیچے ایم پی ایز کے گروپ بن گئے ہیں اور ہو سکتا ہے کہ پیپلز پارٹی سینیٹ الیکشن میں ایک آدھی سیٹ پر ٹف ٹائم دے جبکہ چوہدری سرور یقینا ٹف ٹائم دینے والے ہیں۔ جوڑ توڑ اس وقت بہت عروج پر ہے۔

لاہور اور اسلام آباد میں میٹنگز ہوئی ہیں جبکہ مسلم لیگ (ن) کے ایم پی ایز کی ایک سے دو میٹنگز ملتان میں بھی ہوئی ہیں اور چوہدری نثار کو اس کی خبر مل چکی ہے اور انہیں پتہ چل گیا ہے کہ مشاہد حسین کی مسلم لیگ (ن) میں شمولیت کے باعث بہت سے لوگ نظر انداز ہوئے ہیں۔“


Get real time updates directly on you device, subscribe now.

اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

Translate »