عافیہ صدیقی کے معاملے میں جو قانونی مدد ہو سکے گی کریں گے، شاہ محمود قریشی

 وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ امریکا میں قید ڈاکٹر عافیہ صدیقی کی مشکلات کو کم کرنے کی کوشش کریں گے۔ ملتان میں بات کرتے ہوئے شاہ محمود قریشی نے کہا کہ اگلے ہفتے عافیہ صدیقی کی بہن سے ملاقات ہو گی، جس میں اس معاملے پر گفتگو کی جائے گی۔ شاہ محمود قریشی نے کہا کہ ڈاکٹر عافیہ صدیقی کے معاملے میں جو قانونی مدد ہو سکے گی کریں گے۔

وزیراعظم عمران خان کے 100 روزہ پلان پر گفتگو کرتے ہوئے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا کہ عمران خان کے 100 دن کابینہ ارکان اور کارکنان کے لئے ٹارگٹ تھا، اس عرصے میں ٹارگٹ پورے نہیں ہوئے تو معاملات کا جائزہ لیا جائے گا۔ بھارت کے ساتھ تعلقات کے حوالے سے شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ تعلقات میں بہتری کے لیے امن کے علاوہ کوئی اور راستہ نہیں ہے۔

شاہ محمود قریشی نے کہا کہ ہم بھارت کے ساتھ مذاکرات کے لیے تیار تھے، لیکن ہمارے پڑوسی ملک نے بات چیت کا ایک بہترین موقع گنوا دیا۔ ان کا کہنا تھا کہ بھارت کے انتخابات تک مذاکرات میں کوئی پیش رفت دکھائی نہيں دیتی۔

قبل ازیں ترجمان دفتر خارجہ ڈاکٹر فیصل کا ہفتہ وار پریس بریفنگ دیتے ہوئے کہنا تھا کہ ڈاکٹر عافیہ صدیقی کے معاملے پر امریکا سے بات ہوئی ہے، البتہ ان کی رہائی سے متعلق تاحال کوئی فیصلہ نہیں ہوا۔

واضح رہے کہ امریکا میں قید ڈاکٹر عافیہ صدیقی نے وزیراعظم عمران خان کے نام ایک خط لکھا ہے جس میں انہوں نے اپنی رہائی کی اپیل کی ہے۔ اس کے علاوہ پاکستان نے امریکی نائب وزیر خارجہ ایلس ویلز کے دورہ پاکستان میں بھی عافیہ صدیقی کا معاملہ اٹھایا اور کہا کہ عافیہ صدیقی سے متعلق تمام تر بنیادی انسانی حقوق کو مدنظر رکھا جائے۔


اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.