پاکستان تحریک انصاف کی رہنما فردوس عاشق کے زیراستعمال گاڑی غیرقانونی نکلی گاڑی کو تحویل میں لے لیا گیا

راولپنڈی:  پاکستان تحریک انصاف کی رہنما فردوس عاشق کے زیراستعمال گاڑی غیرقانونی نکلی اور ان کے زیراستعمال سمگل شدہ ، ٹمپرڈگاڑی کو تحویل میں لے لیا گیا  تاہم خاتون رہنماءنے اس گاڑی سے لاتعلقی کا اعلان کرتے ہوئے کہاکہ پکڑی گئی سفید لینڈکروزور ان کی ملکیت نہیں تاہم وہ استعمال کرتی رہی ہیں۔
ڈی جی انٹیلی جنس کسٹمزراولپنڈی کی ہدایت پر کارروائی کرتے ہوئے جی الیون اسلام آباد کے علاقے سے فردوس عاشق اعوان کی گاڑی پکڑی گئی ، پکڑے جانے کے وقت فردوس عاشق اعوان کا ڈرائیور2013ءماڈل گاڑی چلا رہاتھا تاہم یہ واضح نہیں ہوسکا کہ اس وقت خاتون سیاستدان گاڑی میں موجود تھی یا نہیں ۔ بعدازاں فردوس عاشق اعوان کاکہناتھاکہ وہ یہ گاڑی استعمال نہیں کرتی، میری ملکیت بھی نہیں اور نہ ہی کہیں سے خریدی نا کاغذات میرے نام ہیں۔فردوس عاشق اعوان نے انکشاف کیا کہ کچھ عرصے سے اپنی گاڑی استعمال نہیں کرپارہیں، پکڑی گئی یہ گاڑی تحسین اعوان کی ہے اور وہ بعض اوقات اپنے حلقے میں جانے کے لیے بوقت ضرورت وہ استعمال کرتی ہیں لیکن کاغذات مکمل ہوتے ہیں ۔ غیرقانونی گاڑی استعمال کرنے سے متعلق سوال کے جواب میں فردوس عاشق اعوان کاکہناتھاکہ غیرقانونی قراردینے کا کسی کوحق نہیں، مالک کا موقف بھی سنناچاہیے ۔


اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.