پنجاب حکومت نے سانحہ ماڈل ٹاﺅن انکوائر ی کے بیانات کی نقول فراہم کرنے سے معذرت کرلی

پنجاب حکومت نے سانحہ ماڈل ٹاﺅن کی جوڈیشل انکوائری میں وزیر اعلیٰ میاں شہباز شریف سمیت دیگر حکام کے بیانات فراہم کرنے سے معذوری ظاہر کر دی۔سانحہ ماڈل ٹاﺅن کے متاثرین نے ایڈووکیٹ اظہر صدیق کی وساطت سے خط لکھا تھا جس میں سانحہ ماڈل ٹاﺅن کی جوڈیشل انکوائری میں وزیراعلیٰ پنجاب شہباز شریف وزیرقانون رانا ثناءاللہ اور دیگر کے بیان حلفی کی نقول فراہم کرنے کی استدعا کی گئی تھی تاہم ہوم سیکرٹری نے سانحہ ماڈل ٹاﺅن کی جوڈیشل انکوائری میں ملزمان کے بیان حلفی کی تصدیق شدہ نقول متاثرین کو فراہم کرنے سے معذرت کر لی اور سانحہ ماڈل ٹاﺅن کے متاثرین کی درخواست پر جواب دے دیا جس میں کہا گیا ہے کہ ٹربیونل نے سانحہ ماڈل ٹاﺅن جوڈیشل انکوائری رپورٹ کے ساتھ حکام کے بیانات فراہم نہیں کیے تھے ،اب سانحہ ماڈل ٹاﺅن کے متاثرین نے پنجاب حکومت کے موقف کی روشنی میں رجسٹرار لاہور ہائیکورٹ کو خط لکھ دیا سانحہ ماڈل ٹاﺅن کے متاثر قیصر اقبال نے اظہر صدیق ایڈووکیٹ کے توسط سے رجسٹرار لاہور ہائیکورٹ کو خط لکھا ہے جس میں ہوم سیکرٹری کے موقف سے آگاہ کیا گیا ہے اور شہباز شریف سمیت دیگر حکام کے بیانات کی نقل فراہمی کی استدعا کی گئی ہے۔


اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.