اہم خبرِیں
افغانستان میں تعینات جارجیا کے 28 فوجی کرونا وائرس میں مبتلا ملک میں کورونا وائرس کے 2751 نئے کیسزرپورٹ، 75 مریض جاں بحق بھارت اپنے دفاع پر بے پناہ وسائل خرچ کررہا ہے‘اکرام سہگل سندھ حکومت کی جانب سے پہلی بار باقاعدہ طور پر تھانوں کا بجٹ من... چینی اور کھانے کی دیگر اشیاء کی قیمتوں میں روز بروز اضافہ نیپال نے بھارتی پروپیگنڈا کے رد عمل میں ملک میں تمام بھارتی چی... امریکی محکمہ خارجہ کی جانب سے جاپان کو 23 ارب ڈالر کے 105 ایف ... ڈریکولا اصل میں کون تھا، حقیت یا آفسانہ؟ مولانا فضل الرحمان کی بلاول بھٹو زرداری اور آصف علی زرداری سے ... سشانت سنگھ کے بعد اب ایک اور بھارتی اداکار کی خودکشی میڈیا کو پھانسی دینی چاہیے، نعمان اعجاز کا ڈرامہ انڈسٹری پر غص... معروف کامیڈین اور اداکارہ روبی انعم کو دل کا دورہ، اسپتال منتق... پی سی بی کا سلیم ملک اور سابق لیگ اسپنر دانش کنیریا پر عائد پا... کھلاڑیوں کوخود ہی ایک دوسرے کی حوصلہ افزائی کرنی ہو گی، مشتاق ... ویسٹ انڈیز کے مایہ ناز فاسٹ بولر مائیکل ہولڈنگ نسلی تعصب پر با... اعلیٰ ترک عدالت نے 'آیا صوفیہ' کی میوزیم کی حیثیت ختم کر دی 8 پولیس اہلکاروں کے قتل میں ملوث گینگسٹر انکاؤنٹر میں ہلاک چینی برانڈ 'شین' کی جائے نماز کو سجاوٹی قالین فروخت کرنے پر مع... الیکشن سے پہلے جھاڑو پھر جائے گا، شیخ رشید سینیٹر سرفراز بگٹی کے ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری

پشاور کے استاد کا چہرے پر مسکراہٹ لیے طلبہ کو خوش آمدید کہنے کا اسٹائل مقبول

اکثر طلبہ کو صبح اسکول جانا کچھ زیادہ پسند نہیں ہوتا، لیکن اگر تعلیمی ادارے کے گیٹ پر ایک ہنستا مسکراتا چہرہ ان کا خوشگوار انداز میں استقبال کرے تو وہ ضرور خوشی خوشی اسکول جانے پر رضامند ہوں گے۔ پشاور کینٹ کے ایک سرکاری اسکول میں بھی ایک استاد موجود ہیں، جو انتہائی دل موہ لینے والے انداز میں صبح طلبہ کا استقبال کرتے ہیں اور بچے ان کے اسٹائل کے دلدادہ ہیں۔

اسکول آنے والے بچوں کیلئے ہر دن ان کے استاد محمد اویس خان چہرے پر مسکراہٹ لیے، اسکول کے مرکزی دروازے پر طالب علموں کو پیار بھرے انداز میں خوش آمدید کہنے کے لیے موجود ہوتے ہیں۔ گورنمنٹ ہائی اسکول نمبر ون کینٹ کے استاد اویس خان کے مشفقانہ برتاؤ کے باعث طالب علم بھی ہنسی خوشی اسکول آتے ہیں۔ طلبہ کے مطابق انہیں بہت اچھا لگتا ہے کہ صبح سویرے ان کے ٹیچر ان کا استقبال کرتے ہیں۔

محمد اویس کا کہنا ہے کہ محبت اور شفقت پر مبنی رویہ بچوں پر خوش گوار اثرات مرتب کرتا ہے۔  انہوں نے بتایا کہ اکثر بچوں کی نیند پوری نہیں ہوتی، جس کی وجہ سے وہ لیٹ پہنچتے ہیں لیکن جب گیٹ پر ان کا ٹیچر خود استقبال کے لیے کھڑا ہوتا ہے تو پھر وہ اس بات کا خیال رکھتے ہیں کہ وہ دیر سے اسکول نہ آئیں۔

اسکول میں اسمبلی سے قبل اساتذہ طلبہ کے ساتھ کھیل کود میں حصہ بھی لیتے ہیں تاکہ طالب علم دن بھر ذہنی طور پر تروتازہ رہیں۔


Get real time updates directly on you device, subscribe now.

اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.