مریم نوازکا نام بھی 11 بااثرخواتین کی فہرست میں شامل

سابق وزیراعظم نوازشریف کی صاحبزادی مریم نواز شریف کو اس  سال کی 11 بااثر ترین خواتین کی فہرست میں شامل کرلیا گیا۔

مریم نواز کا نام امریکی اخبار ’’نیویارک ٹائمز‘‘ کی جانب سے اپنی ہمت و عزم کی بناء پر دنیا میں اپنی پہچان کرانے والی گیارہ بااثر ترین خواتین کی فہرست میں شامل کیا گیا ہے۔

امریکی اخبار کی جانب سے جاری کی جانے والی اس فہرست میں مریم نواز کے لیے لکھا گیا کہ وہ اپنے والد کی جانشین بن کر سامنے آئی ہیں تاہم کرپشن کے الزامات ان کی بڑھتی ہوئی مقبولیت کی راہ میں رکاوٹ ہیں۔

مریم نواز کی وجہ شہرت ان کی سیاسی میدان میں جدوجہد ہے۔ پاناما کیس میں والد کی نااہلی کے بعد مریم نواز نے مختصر عرصے میں پارٹی کے لیے نمایا کردار ادا کیا اور والد کی خالی ہونے والی نشست لاہور کے حلقہ این اے 120 پر ضمنی انتخاب میں اپنی والدہ کیلئے بھرپور انتخابی مہم چلائی۔

مریم نواز کو پاکستان میں اب نواز شریف کی سیاسی جانشین کے طور پر دیکھاجاتا ہے۔ وہ عدالتی مقدمات میں بھی اپنے والد کے شانہ بشانہ نظر آتی ہیں۔

امریکی اخبار کی جانب سے جاری کی جانے والی اس فہرست میں مریم نواز کے لیے لکھا گیا کہ وہ اپنے والد کی جانشین بن کر سامنے آئی ہیں تاہم کرپشن کے الزامات ان کی بڑھتی ہوئی مقبولیت کی راہ میں رکاوٹ ہیں۔

نیویارک ٹائمز کی جانب سے اس فہرست کا اجراء سال 2002 سے کیا جارہا ہے اور اس میں ایسی خواتین کانام شامل کیا جاتا ہے جنہوں نے کوئی غیرمعمولی کام سرانجام دیا ہو یا ان کی زندگی غیر معمولی ہو۔

سال 2017 کے لیے اس فہرست میں مریم نواز کے علاوہ سعودی خواتین کے حقوق کیلئے سرگرم خاتون منال الشریف کا نام سرفہرست ہے۔ اس کے علاقہ سویڈش وزیرخارجہ مارگوٹ وال اسٹارم، میانمار کی الیوینگ، فرانسیسی مصنفہ ہنڈا آیارای، اٹلی سے تعلق رکھنے والی لیتزا بتگالیہ، ترک مصنفی ایسلی اردگان، جرمنی کی الیس سکورز، انڈونیشیا کی سنتا نوریہا اور چین سے تعلق رکھنے والی شاعرہ زوشہیوا کا نام شامل ہے۔

دنیا کی طویل طرین عمر پانے والی 117 سال کی عمر میں وفات پا جانے والی ایما مورانو کا نام بھی اس فہرست میں رکھا گیا ہے


اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.