لاہور ہائی کورٹ نے سوائن فلواور ذمہ داروں کا تعین کرنے کے لئے درخواست کا فیصلہ محفوظ کر لیا ہے

لاہور ہائی کورٹ نے سوائن فلو پر قابو پانے کے بروقت موثر اقدامات نہ کرنے اور ذمہ داروں کا تعین کرنے کے لئے درخواست کے قابل سماعت ہونے کے بارے میں فیصلہ محفوظ کر لیا ہے۔

لاہور ہائی کورٹ کی جسٹس عائشہ اے ملک نے ایڈوکیٹ اظہر صدیق کی درخواست پر سماعت کی جس میں موقف اختیار کیا گیا ہے کہ ملک کے مختلف حصوں سے اب تک 1472 سوائن فلو کے کیسز سامنے آئے ہیں اور 24 افراد حکومت کی نااہلی کے باعث اپنی زندگی سے ہاتھ دھو بیٹھے ہیں۔

درخواست گزار وکیل نے الزام لگایا کہ آئین کے تحت عوام کو صحت کی سہولیات فراہم کرنا حکومت کی ذمہ داری ہے لیکن حکومت اپنی ذمہ داری پوری کرنے میں ناکام ہوگئی ہے۔

درخواست میں استدعا کی گئی کہ سوائن فلو کے تدارک کی موثر اقدامات کرنے اور بروقت قابو نہ پانے والے ذمہ داروں کے خلاف کارروائی کا حکم دیا جائے۔


اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.