Daily Taqat

نواز شریف کا متنازعہ انٹرویو کرنے والے صحافی نے خصوصی طیارے کی خبریں مسترد کردیں

ڈان لیکس کے بعد شہرت پانے والے صحافی سرل المیڈا جو کہ ان دنوں ایک مرتبہ پھر سابق وزیراعظم کے متنازعہ انٹرویو کرنے اور خصوصی پروٹول کے ذریعے ملتان پہنچنے کے معاملے پر سب کی توجہ کا مرکز بنے ہوئے ہیں، کی گزشتہ دن نواز شریف کے ساتھ کھانا کھاتے ہوئے تصویر وائرل ہوئی، جس پر مختلف قسم کی چہ میگوئیاں جاری ہیں۔ تاہم سرل المیڈا نے میاں نواز شریف کے ساتھ تصویر پر پہلی مرتبہ سماجی رابطے کی ویب سائٹ پر پیغام جاری کرتے ہوئے مسکرانے کی وجہ بتادی ہے۔

سرل المیڈا نے اس تصویر کے بارے لکھا کہ ’یقین کریں کہ اس وقت جب کسی نے انہیں سری پائے پیش کرنے کی کوشش کی تو انہوں نے شکایت کی کہ وہ یہ نہیں کھاتے لیکن ہر کوئی یہ کہتا ہے کہ وہ کھاتے ہیں۔ آپ کو بھی اس بات پر مسکرا نا پڑے گا؟‘ ایک اور پیغام میں سرل المیڈا نے خصوصی طیارے کے ذریعے ملتان جانے اور انٹرویو کرنے بارے تمام خبروں کو مسترد کرتے ہوئے کہا کہ یقیناً خصوصی طیارے کا پلان ’اس‘ کا تھا۔ پلان کے مطابق مجھے بتایا گیا تھا کہ آپ نے ایئرپورٹ پر جانا ہے اور وہاں ان سے ملاقات کرنی ہے۔ خط سکیورٹی کا معاملہ ہے اور اس کے بارے سکیورٹی سے متعلقہ افراد سے ہی پوچھا جائے؟ آخر میں، میں ایئرپورٹ پر نہیں گیا،ان (نواز شریف ) سے وہاں پر ملاقات نہیں کی بلکہ کسی اور جگہ انٹرویو کیا۔ اپنے ایک اور ٹوئٹ میں سر المیڈا نے لکھا کہ انٹرویو کی ٹائمنگ بدقسمتی کا معاملہ تھا، کیونکہ میں پہلے ہی ملتان میں جنوبی پنجاب سے متعلق ایک سٹوری کی تلاش میں موجود تھا۔ اور وہاں مجھے پتہ چلا کہ نواز شریف کا جلسہ اگلے دن ہے اور ان سے انٹرویو کیلئے پہنچ گیا۔ انہوں کہا کہ وہ واضح طور پر بولنا اور سننا چاہتے تھے۔ مجھے خوشی ہے کہ میں اس وقت وہاں موجود تھا۔


Get real time updates directly on you device, subscribe now.

اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

Translate »