معصوم 4 سالہ عاصمہ کا قاتل بھی ابھی تک پکڑانہ گیا، ضلع کونسل کے اجلاس میں پی ٹی آئی رہنماءآپس میں الجھ پڑے

مردان: ننھی پری عاصمہ کا قاتل بھی ابتک گرفت سے باہر ہے۔ ضلع کونسل کے اجلاس میں پی ٹی آئی رہنماءآپس میں الجھ پڑے۔ انتظامیہ ملزم پکڑنے کے بجائے کرپشن کر رہی ہے، واجد علی کا الزام۔عاصمہ کیس کی الجھی گتھی دسویں روز بھی نہ سلجھ سکی۔ قاتل درندے اب تک آزاد ہیں۔

کمسن کو انصاف دلانے کیلئے بلایا جانیوالا مردان کی ضلعی حکومت کا اجلاس ہنگامے کی نذر ہو گیا۔ پی ٹی آئی ارکان آپس میں ہی لڑ پڑے۔ خوب گالم گلوچ بھی ہوئی۔ پی ٹی آئی رکن واجد علی نے ضلعی انتظامیہ پر کرپشن کا الزام لگایا تو دوسرے رکن ڈاکٹر شیر بہادر آستینیں چڑھا کر اپنے ہی ساتھی کیخلاف میدان میں آ گئے۔ ہلڑ بازی اور شور شرابے کے باعث ایوان مچھلی منڈی بنا رہا۔ضلعی حکومت نے چیف جسٹس سے 4 سالہ بچی سے زیادتی اور قتل پر از خود نوٹس لینے کا مطالبہ کیا جبکہ متاثرہ خاندان کے لئے 20 لاکھ روپے امداد کی منظوری بھی دی۔


اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.