ایف بی آر کی ریگولیٹری ڈیوٹی سے مہنگائی کا طوفان برپا ہوگیا

ایف بی آر کی ریگولیٹری ڈیوٹی سے مہنگائی کا طوفان آگیا ۔لوہے اور کاغذ کی قیمتوں میں اضافہ ۔تعمیراتی کاموں میں استعمال ہونیوالا سریا ، ٹی آر اینگل سب مہنگا ، کاغذ ستر روپے سے پچانوے روپے فی کلو تک پہنچ گیا ۔ایف بی آر کی

ریگولیٹری ڈیوٹی سے لوہے اور کاغذ کی قیمتوں کو پر لگ گئے ۔ گھروں کی تعمیر میں استعمال ہونیوالے سٹیل کی قیمت دو دن میں4 سے 6روپے فی کلو بڑھ گئی ۔سٹیل شیٹ 68 روپے سے75 روپے فی کلو ہوگئی۔گارڈر بیم کی قیمت میں 4 روپے اضافہ کے ساتھ 92روپے فی کلو تک پہنچ گئی ۔جبکہ ٹی آر اینگل کی قیمت مزید پانچ روپے بڑھنے سے 83 روپے فی کلو ہوگئی۔تاجروں کا کہنا ہے کہ لوہے کی قیمتوں میں اضافہ سے تجارتی سرگرمیاں بھی متاثرہونے لگی ہیں۔حکومت قیمتوں میں کمی کیلئے اقدامات کرے۔ دوسری جانب پیپر ملز کی اجارہ داری سے دو ماہ میں کا غذ کی فی کلو قیمت میں 15سے 20روپے اضافہ ۔کاغذ 95روپے فی کلو گرام میں فروخت ہونے لگا ۔تاجر برادری نے کاغذ کی قیمت میں اضافہ پر حکومت سے نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے ۔ کہتے ہیں آئے روز قیمت بڑھانے سے کاروبار بری طرح متاثر ہو رہا ہے ۔سابق صدر آل پاکستان پیپر مرچنٹ ایسوسی ایشن اور لاہور چیمبر کے ایگزیکٹو ممبر خامس سعید بٹ نے کہا کہ ملز مالکان کی اجارہ داری سے سب کو نقصان ہو رہا ہے۔لوہے اور کاغذ کے تاجروں نے حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ قیمتوں میں کمی لانے کے لیے اقدامات کیے جائیں ۔


اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.