اہم خبرِیں

لاک ڈاؤن سے ستائی عوام کو آٹا بحران نے جکڑ لیا

ایک کے بعد ایک بحران عوام کے سامنے آنے لگا۔ لاک ڈاؤن سے ستائی عوام کو آٹا بحران نے جکڑ لیا۔ کہیں آٹے کی قلت تو کہیں من مانی قیمت پر آٹا فروخت ہونے لگا۔ چکی مالکان نے بھی آٹے کی قیمت میں اضافہ کر دیا۔ آٹا 62 روپے کی بجائے 66 روپے فی کلو فروخت ہونے لگا۔
لاہور میں آٹا مہنگا ہو گیا۔ فلور ملز کے آٹے کی قلت اور من مانی قیمت پر فروخت جاری ہے۔ چکی آٹا تین روپے کلو کی اضافی قیمت کے ساتھ بیچا جا رہا۔ عوام مہنگائی کی چکی میں پسنے لگے۔

آٹا بحران نے ایک بار پھر عوام کو جکڑ لیا۔ کہیں قلت اور کہیں من مانی قیمت پر فروخت جاری ہے۔ فلورملز آٹا کی قیمت بڑھانے پر بضد ہیں۔ چکی مالکان نے بھی آٹا مہنگا کر دیا۔ شہر میں چکی آٹے کی قیمت 66 روپے کلو ہو گئی۔

چکی مالکان کا کہنا ہے کہ گندم 2 ہزار روپے من ہو گی پھرآٹا تو مہنگا ہو گا۔ چکی آٹا دستیاب تو ہے لیکن فلور ملز کا 20 کلو آٹے کے تھیلے کی قلت ہو گئی۔ جہاں پر آٹا دستیاب ہے وہاں دکاندار من مانی قیمت وصول کر رہے ہیں۔ دو ہفتے قبل 825 روپے میں فروخت ہونے والا 20 کلو آٹے کا تھیلا ایک ہزار روپے تک فروخت ہو رہا۔

عوام کا کہنا ہے کہ زندگی پہلے ہی مشکل ہو چکی ہے۔ 2 وقت کی روکھی سوکھی روٹی کے لئے آٹا بھی پہنچ سے باہر ہو رہا۔ حکومت کی جانب سے آٹا مہنگا نہ کرنے کے دعوے تو جاری ہیں لیکن مارکیٹ میں حکومت بے بس دکھائی دیتی ہے۔


Get real time updates directly on you device, subscribe now.

اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.