فاٹا پر فیصلے اتفاق رائے سے ہوں گے، وزیراعظم

وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے کہا ہے کہ فاٹا سے متعلق تمام فیصلے اتفاق رائے سے کیے جائیں گے۔شاہد خاقان عباسی نے خیبرایجنسی کے جمرود اسٹیڈیم میں اسپورٹس فیسٹیول کی تقریب میں شرکت کی، اس موقع پر گورنر خیبرپختونخوا اقبال ظفرجهگڑا بهی ان کے ہمراہ تھے۔قبائلی عمائدین نے وزیراعظم کا پرتپاک استقبال کیا، قبائلی سردار ملک فیض اللہ جان نے وزیراعظم کو روایتی پگڑی پہنائی۔تقریب سے خطاب میں وزیراعظم نے کہا کہ قائداعظم نے قبائل سے جو وعدے کئے تهے آج انہیں نبهائیں گے۔’میرا وعدہ ہے کہ فاٹا کو ضرور قومی دهارے میں شامل کیا جائے گا، فاٹا کی ہر ایجنسی کے اندر ایک ایک یونیورسٹی قائم کی جائے گی۔‘انہوں نے کہا کہ فاٹا کے نوجوانوں نے دہشتگردی کے خلاف جنگ میں بے پناہ قربانیاں دیں، فاٹا کو سہولتیں نہ ملنے پر افسوس ہے۔ فاٹا کے عوام کی حمایت سے پاکستان مزید ترقی کرے گا۔وزیراعظم نےاس سے پہلے اسلامیہ کالج پشاور میں محمد علی جناح لائبریری کا افتتاح کیا تھا۔کالج میں تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم نے کہا کہ قائداعظم نے اپنی فہم و فراست اورعلم کی بنیادپرمسلم حقوق کی جنگ لڑی اور انہوں نے تحریک پاکستان میں اسلامیہ کالج کےطلبہ کےکردارکی ہمیشہ تعریف کی۔انہوں نے کہا کہ حکومت نے پاکستان کے ہر ضلع میں یونیورسٹی بنانے کا تہیہ کر رکھا ہے، تعلیم سے بہتر کوئی سرمایہ کاری نہیں، حقیقی ترقی تعلیم کی ترقی کے بغیر ممکن نہیں، تعلیم کے فروغ میں اعلیٰ تعلیمی کمیشن کا کردار بہت اہم ہے۔وزیراعظم کا کہنا تھا کہ قائداعظم کے پاس دلیل کی طاقت تھی، قائد اعظم کے اصولوں کو اپنالیں تو پاکستان کسی ملک سے پیچھے نہیں رہےگا۔


اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.