عدالت نے شاہد مسعود کے دعووں کی تحقیقات کیلئے جے آئی ٹی تشکیل دینے کا حکم دے دیا

لاہور: قصور میں زینب کے قاتل کے پکڑے جانے کے بعد اس کے بینک اکاﺅنٹس اور عالمی گروہ کا حصہ ہونے کے ڈاکٹرشاہد مسعود کے دعووں پر سپریم کورٹ رجسٹری لاہور میں سماعت ہوئی جس دوران عدالت نے شاہد مسعود کے دعووں کی تحقیقات کیلئے جے آئی ٹی تشکیل دینے کا حکم دیدیا لیکن دوران سماعت ڈاکٹرشاہد مسعود نے موقف اپنایا کہ ’انہوں نے تو خبر ہی نہیں دی ، خبرتوخبرنامے میں چلتی ہے‘۔
تفصیل کے مطابق عدالت کے روبر ڈاکٹرشاہد مسعود کاکہنا تھاکہ ان کے پاس ایک انفارمیشن آئی تھی جس پر انہوں نے چیف جسٹس کو مخاطب کرکے کہاکہ تحقیقات کریں ، میں نے خبر نہیں دی ۔ ڈاکٹرشاہد مسعود کامزید کہناتھاکہ عدالت جو سزا دے قبول ہے ، اپنے موقف پر قائم اور ان کو نہیں چھوڑوں گا، عدالت ملزم عمران کو اپنی تحویل میں لے ،ورنہ اسے مار دیاجائے گا۔
اونچی آواز میں بات کرنے پر چیف جسٹس نے ڈاکٹرشاہد مسعود کو جھاڑ پلادی اور ریمارکس دیئے کہ نرمی سے بات کررہاہوں،مگرآپ ہرگزاونچی آواز میں نہ بولیں، نہیں چاہتا کہ حالات میں تناﺅ پیداہو۔


اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.