عدالت نے ڈی جی ایل ڈی اورحمید لطیف ہسپتال کے مالک کو کل طلب کر لیا

لاہور : نجی میڈیکل کالجز کی جانب سے اضافی فیس وصولی کیخلاف درخواست کی سماعت کے دوران چیف جسٹس ثاقب نثارنے شریف میڈیکل اینڈڈینٹل کالج کی جانب سے کسی کوبھی پیش نہ ہونے پرکہا  کہ فوری معلوم کریں کہ شریف میڈیکل کالج کون چلا رہا ہے،ذمہ دارکو سمن جاری کرکے بلائیں گے ،

چیف جسٹس آف پاکستان نے ایڈووکیٹ جنرل پنجاب کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ ایڈووکیٹ جنرل صاحب!خادم اعلیٰ کو سب کچھ بتائیں ،عدالت نے نوٹس جاری کرتے ہوئے کل تفصیلات طلب کر لیں۔
دوران سماعت حمید لطیف ہسپتال کے چیف ایگزیکٹو عدالت میں پیش ہوئے، چیف جسٹس نے اظہار برہمی کرتے ہوئے استفسار کیا کہ کالج کا مالک پیش کیوں نہیں ہوا، انہوں نے کہا کہ گارڈن ٹاﺅن میں ہسپتال بنا کر خوبصورتی کا بیڑہ غرق کر دیا گیا،آپ کے پاس پارکنگ ہے نہ سہولتیں ۔
چیف جسٹس نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ آپ کو ہسپتال کھولنے کی اجازت کس نے دی اورڈی جی ایل ڈی اے نے نقشے کس قانون کے تحت منظور کئے ، عدالت نے ڈی جی ایل ڈی اورحمید لطیف ہسپتال کے مالک کو کل طلب کر لیا۔


اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.