دہشت گردکارروائیوں کا مقصدسی پیک کو ناکام بنانا

کوئٹہ: وفاقی وزیر داخلہ احسن اقبال کہتے ہیں کہ ہم دہشتگردی کےخلاف جنگ لرتے رہیں گے۔ فرار دہشتگرد مغربی سرحد سے دوبارہ ملک میں داخل ہوکر دہشتگردی کررہے ہیں، دشمن بلوچستان میں کارروائیاں کرکے پاکستان کو عدم استحکام کا شکار کرنا چاہتا ہے، میں سیاسی جماعتوں کو پیغام دیتا ہوں کہ ملک میں عدم استحکام کا فائدہ دشمنوں کو ہوگا،ان خیالات کا اظہار وفاقی وزیر داخلہ نے کوئٹہ میں دہشتگردی سے متاثرہ چرچ کے دورے کے دوران کیا۔

وزیراعلیٰ پنجاب شہبازشریف کے دورہ سعودی عرب پر تبصرہ کرتے ہوئے احسن اقبال کا کہناتھا کہ سعودی عرب ہر کوئی جاتا ہے، میں بھی ہفتہ پہلے دورہ کرکے آیاہوں،کوئی نہ کوئی ایم این اے ، ایم پی اے یا وزیر سعودی عرب گیا ہوا ہوتا ہے،ضروری نہیں کہ سعودی عرب جاکر ہر کوئی سیاست کرے ،احسن اقبال نے کہا کہ ڈی جی آئی ایس پی آر کے بیان پرسعد رفیق کی وضاحت کے بعدمعاملہ ختم ہوگیا۔

انہوں نے کہا کہ دہشتگرد کسی مذہب کے دشمن نہیں بلکہ انسانیت کے دشمن ہیں،دہشت گردوں نے مسجدوں،ہسپتالوں اورشہریوں پر حملے کئے،کوئٹہ چرچ حملے میں مسیحی برادری کا جانی نقصان پاکستان کا نقصان ہے،وفاقی وزیر داخلہ نے کہا کہ گزشتہ4 سالوں میں ملک میں دہشتگردی کی کمر توڑ دی ہے ،ہماری کمیونٹیز اورقانون نافذکرنیوالے اداروں میں جذبہ بیدار ہوچکا ہے،دہشت گرد کارروائیوں کا مقصدسی پیک کو ناکام بنانا ہے،ہمارا فرض ہے ملک میں امن استحکام کو قائم رکھیں،کوئٹہ کیلئے ضروری ہے کہ سیف سٹی پراجیکٹ کو مکمل کیاجائے،انہوں نے کہا کہ پاکستان نازک دور سے گزر رہا ہے، یہ وقت دہشتگردی کیخلاف سیسہ پلائی دیواربننے کا ہے،دھرنے یاانتشارکی سیاست کافائدہ دہشتگردوں کوہوگاجوبے یقینی پیدا کرنا چاہتے ہیں۔

وفاقی وزیر مذہبی امور سردار یوسف کا کہناتھا کہ 17 دسمبر کو ہونے والے افسوسناک واقعے کی جتنی مذمت کریں کم ہے،ہم مسیحی برادری سے اظہار یکجہتی کیلئے یہاں پہنچے ہیں ،انہوں نے کہا کہ پاکستان کے تحفظ کیلئے دی گئیں قربانیاں رائیگاں نہیں جائیں گی اورجو جانیں ضائع ہوچکیں ان کی تلافی یا بدل نہیں ہے ،چرچ کی بحالی کریں گے ،زخمیوں کے علاج کیلئے ہدایات بھی دی ہیں ،وفاقی وزیر نے کہا کہ دہشتگردوں کا کوئی مذہب نہیں وہ انسان دشمن ہیں ۔


اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.