Daily Taqat

لاہور: چوری کے الزام میں خواتین کو بدترین تشدد کا نشانہ بنانے والے ملزمان گرفتار

لاہور میں چوری کا الزام لگا کر خواتین کو بہیمانہ تشدد کا نشانہ بنانے والے چار ملزمان کو پولیس نے گرفتار کر لیا۔ تشدد کی ویڈیو وائرل ہونے پر وزیر اعلیٰ پنجاب نے نوٹس لیا تھا۔ لاہور کے علاقے جلوموڑ میں دکاندار نے چوری کا الزام لگا کر خواتین کو بری طرح سے تشدد کا نشانہ بنایا۔ تشدد کی فوٹیج سوشل میڈیا پر آنے کے باوجود پولیس ملزموں پر ہاتھ ڈالنے سے گریز کرتی رہی، تاہم وزیر اعلیٰ پنجاب کے نوٹس لینے پر مقدمہ درج کیا گیا۔

وزیر اعلیٰ کے نوٹس کے بعد تھانہ باٹا پور پولیس نے چار ملزموں عدنان، مختار، بلال اور شبیر کو گرفتار کر لیا۔ تھانہ باٹا پور پولیس کی مدعیت میں درج مقدمے میں عدنان اور مختار کو ملزم نامزد کیا گیا ہے۔ پولیس کے مطابق ملزموں کی نشاندہی پر پانچویں ملزم انور چوہدری کو گرفتار کرنے کے لئے چھاپے مارے جا رہے ہیں۔ خواتین پر تشدد کی ویڈیو وائرل ہونے کے بعد سوشل میڈیا صارفین نے ذمہ داروں کیخلاف سخت ایکشن لینے کی اپیل کی ہے۔ ڈی آئی جی نے انچارج انویسٹی گیشن باٹا پور کو ملزموں کی تفتیش جلد مکمل کرنے کی ہدایت کر دی۔

خیال رہے کہ کل لاہور کے علاقہ باٹاپور میں چوری کے الزام میں 5 افراد نے خواتین کو بد ترین تشدد کا نشانہ بنایا تھا۔ دو خواتین کو دکان میں ڈنڈوں اور ٹھوکروں سے تشدد کا نشانہ بنا کر حیوانیت کی بد ترین مثال پیش کی گئی۔


Get real time updates directly on you device, subscribe now.

اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

Translate »