قصور ویڈیو سکینڈل کا مقصد ملک میں سنسنی پھیلانا ہے:راناثنااللہ

وزیر قانون پنجاب رانا ثنااللہ کا کہنا ہے کہ قصور ویڈیو سکینڈل کا مقصد ملک میں سنسنی پھیلانا ہے اس حوالے سے بھی یہ باتیں بھی اتنی ہی بے بنیاد ہیں کہ اس میں کوئی گروہ یا عالمی نیٹ ورک شامل ہے،پہلے385 اورپھر275 ویڈیوکا کہاگیاتھا یہ بھی کہا گیا کہ ویڈیوفروخت کرکے35کروڑروپے حاصل کیے گئے،تاہم تحقیقات کے بعدپتاچلابچوں کی تعداد275 نہیں 23 تھی۔صوبائی وزیر قانون رانا ثنااللہ کا کہنا تھا کہ قصورویڈیوسکینڈل میں ملزمان کی تعداد19 تھی جس میں کچھ لوگ بے گناہ بھی پائے گئے اس معاملے میں اب تک 10مقدمات کو خارج کیا جاچکاہے ۔انہوں نے کہا کہ 8واقعات کاملزم عمران ہی ہے اس کاکسی بین الاقوامی گروہ سے کوئی تعلق نہیں ہے،معصوم لاشوں پرلوگ پوائنٹ سکورنگ کرنا چاہتے ہیں مافیا والی بات درست ثابت ہوئی توکارروائی ہوگی ، اگرغلط ثابت ہواتوسنسنی پھیلانےوالوں کیخلاف بھی کارروائی ہونی چاہیے۔ رانا ثنااللہ کا کہنا تھا کہ ملزم عمران کسی گروپ یامافیا کا حصہ نہیں نہ ہی وہ کوئی جنونی یانفسیاتی مریض ہے ۔ وزیر قانون کا کہنا تھا کہ ملزم عمران زیرتعمیرمکان میں بچی کولےکرگیاتھا مالک مکان کیساتھ اس کا جھگڑا ہوااوروہاں سے بھاگ گیا یہ شخص ہی بچیوں کواپنی ہوس کا نشانہ بناتا تھا، نہیں سمجھتا کہ اس کیس کے پیچھے کوئی اورملوث ہوسکتا ہے، ملزم کاڈی این اے اور پولی گرافک ٹیسٹ بھی لیاگیا۔


اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.