Daily Taqat

آئندہ انتخابات میں سادہ کاغذ کا بیلٹ پیپر استعمال نہیں کیا جائے گا

عام انتخابات 2018 میں سادہ کاغذ کا بیلٹ پیپر استعمال نہیں کیا جائے گا۔ واٹر مارک بیلٹ پیپپرز کی چھپائی کے لیے مخصوص کاغذ منگوا لیا گیا۔ مخصوص کاغذ کی درآمد پر 1 ارب سے زائد کے اخراجات آئے۔ بیلٹ پیپر کی چھپائی پر بھی 1 ارب سے زائد اخراجات آئیں گے۔ بیلٹ پیپر کا مخصوص کاغذ فرانس اور برطانیہ سے پرنٹنگ کارپوریشن آف پاکستان کے ذریعے درآمد کیا گیا۔ ذرائع الیکشن کمیشن کے مطابق عام انتخابات میں 21 کروڑ کے قریب بیلٹ پیپر چھاپے جائیں گے جن کی مکمل تیاری پر 2 ارب سے زائد کے اخراجات ہوں گے۔ عام انتخابات میں سکیورٹی فیچر والے واٹر مارک بیلٹ پیپر استعمال کیے جائیں گے۔  واٹر مارک بیلٹ پیپر قومی اسمبلی کے لیے سبز جبکہ صوبائی اسمبلی کے لیے سفید ہو گا۔


Get real time updates directly on you device, subscribe now.

اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

Translate »