پنجاب ایجوکیشن فاﺅنڈیشن میں جعلی ڈگریوں پر اعلیٰ افسروں کی بھرتیوں کا الزام ،ہائی کورٹ نے جواب طلب کرلیا

لاہور:لاہور ہائیکورٹ نے پنجاب ایجوکیشن فائونڈیشن میں جعلی ڈگریوں پر بھرتی 80اعلیٰ افسروں کی برطرفیوں کے لئے دائر درخواست پر نوٹس جاری کرتے ہوئے پنجاب ایجوکیشن فاونڈیشن سے جواب طلب کر لیاہے۔جسٹس فرخ عرفان خان نے چودھری شعیب سلیم ایڈووکیٹ کی درخواست پر سماعت کی۔درخواست گزار وکیل نے عدالت کو بتایا کہ چیئرمین پنجاب ایجوکیشن فائونڈیشن قمر السلام راجہ نے جعلی ڈگریوں والے بندے بھرتی کئے ہیں، سارے ملازمین کی ڈگریوں کی تصدیق کی گئی لیکن جعلی ڈگریوں والے افسروں کو تحفظ دے دیا گیا، انہوں نے عدالت کو مزید بتایا کہ بورڈ آف ڈائریکٹرز نے کہا جن کی ڈگریوں کی تصدیق نہیں ہوسکی ، انہیں تصدیق سے استثنیٰ دے دیا جائے جس کے بعد چیئرمین کے حکم پر 80افسروں کو ڈگریوں کی تصدیق سے استثنیٰ دے دیا گیا۔چودھری شعیب سلیم نے کہا کہ قانون کے تحت سرکاری ادارے میں بھرتی کے بعد ہر ملازم و افسر کی ڈگری اور تجربے کے سرٹیفکیٹس کی تصدیق لازمی ہوتی ہے ،افسروں کو تصدیق سے استثنیٰ دے کر فاؤنڈیشن کے بورڈ آف ڈائریکٹرز نے جعلی ڈگری والے افسروں کو تحفظ دیا ہے۔ انہوں نے استدعا کی کہ عدالت جعلی ڈگریوں والے افسروں کو تصدیق سے استثنیٰ دینے کا اقدام غیرقانونی قرار دیا جائے اور جعلی ڈگریوں پر بھرتی ہونے والے افراد کو برطرف کیا جائے ۔


اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.