27 جنوری کے روز پنجاب اسمبلی کے سامنے’’جیل بھرو تحریک‘‘ شروع کرنے کا اعلان :اشرف آصف جلالی

لاہور:تحریک لبیک یا رسول اللہﷺ کے چیئرمین ڈاکٹر اشرف آصف جلالی نے کہاہے کہ جیل بھرو تحریک کی کامیابی سے قادیانیوں اور انکے سہولت کار وں کی امیدوں پر پانی پھر جائے گا،یہ تاثر درست نہیں کہ میں اکیلا رہ گیا ہوں،ہمارے  مطالبات پوری قوم کی آواز ہیں،حکومت کو بلاخر عاشقانِ رسولﷺ کی قوت کے سامنے گھٹنے ٹیکنے پڑیں گے۔علامہ اشرف آصف جلالی نے 27 جنوری کے روز پنجاب اسمبلی کے سامنے’’جیل بھرو تحریک‘‘ شروع کرنے کا اعلان کر رکھا ہے جبکہ دوسرے مرحلے میں کراچی اور تیسرے مرحلے میں اسلام آباد میں گرفتاریاں پیش کی جائیں گی ،پنجاب اسمبلی کے سامنے اشرف آصف جلالی اپنے 100 کارکنوں کے ہمراہ سب سے پہلے اپنے آپ کو گرفتاری کیلئے پیش کریں گےاور اس کے بعد ہر روز تحریک کے 100 کارکن اپنے مطالبات کی منظوری تک گرفتاری دیں گے ۔واضح رہے کہ اشرف آصف جلالی نے پیر حمید الدین سیالوی کی موجودگی میں’’ جیل بھرو تحریک ‘‘ کا اعلان کیا تھا تاہم  گذشتہ روز وزیر اعلیٰ پنجاب شہباز شریف نے سرگودھا میں پیر سیالوی سے ملاقات کرتے ہوئے ’’ گلے شکوے ‘‘ دور کئے جس کے بعد پیر سیالوی نے نفاذ شریعت کے لئے دی جانے والی 7 دن کی ڈیڈ لائن واپس لے لی تھی تاہم اشرف آصف جلالی ’’ جیل بھرو تحریک ‘‘ پر اب بھی قائم ہیں اور تیاریاں جاری رکھے ہوئے ہیں ۔اشرف آصف جلالی کا کہنا تھا کہ جیل بھروتحریک کو ملک بھر کے علماء ومشائخ کی حمایت حاصل ہے،شہباز شریف کی پیر حمید الدین سیالوی سے ہونے والی ملاقات کے بعد یہ تاثر درست نہیں کہ میں اکیلا رہ گیا ہوں،یورپی یونین کے زیر اثرحکمرانوں کو نبی ﷺ کے غلاموں سے جنگ مہنگی پڑے گی۔علامہاشرف آصف جلالی نے کہا قصور کی بے قصور زینب کے بدنام زمانہ قاتل کو سرعام سنگسار کیا جائے،اس کو نشانہ عبرت بنانے سے حالات سدھر جائے گے۔انہوں کے کہا ہم کشمیریوں کی جدوجہد آزادی کو خراج تحسین پیش کرتے ہیں5 فروری کو تحریک لبیک یا رسول اللہﷺ پورے ملک میں ’’یوم یکجہتی کشمیر ‘‘منائے گی۔


اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.