نواز شریف، مریم نواز اورکیپٹن صفدر کی رہائی کی تیاریاں شروع

مسلم لیگ ( ن) کے قائد نواز شریف، ان کی بیٹی مریم اور داماد کیپٹن (ر) صفدر کو اڈیالہ جیل سے رہا کرنے کی تیاریاں شروع کردی گئی ہیں اور رہائی کا پروانہ ملتے ہی انہیں رہا کردیا جائے گا۔ اسلام آباد ہائیکورٹ نے ایون فیلڈ ریفرنس میں سزا یافتہ سابق وزیراعظم نواز شریف، مریم اور کیپٹن (ر) صفدر کی سزا معطل کرتے ہوئے رہائی کا حکم جاری کر دیا ہے۔ عدالت میں مسلم لیگ ن کے صدر شہباز شریف سمیت رہنماؤں اور کارکنوں کی بڑی تعداد موجود تھی۔ رہائی کا فیصلہ سنتے ہی خوشی کی لہر دوڑ گئی اور انہوں نے جشن منانا شروع کردیا، جب کہ مٹھائیں بھی تقسیم کی گئیں۔

ادھر راولپنڈی کی اڈیالہ جیل میں نواز شریف، مریم نواز اور کیپٹن (ر) صفدر کو ہائی کورٹ کے فیصلے سے آگاہ کیا گیا تو جیل میں قید تینوں سیاست دانوں نے آسمان کی طرف منہ کرکے اللہ کا شکر ادا کیا۔ جیل حکام کے مطابق نواز شریف، کیپٹن صفدر اور مریم نواز کا سامان پیک کیا جارہا ہے اور روبکار ملتے ہی رہا کردیا جائے گا۔

رہائی کے بعد ممکنہ طور پر نواز شریف سمیت تینوں رہنما اپنی رہائش گاہ جاتی امرا لاہور جائیں گے۔ سابق وزیراعظم سب سے پہلے اپنی والدہ بیگم شمیم اختر سے ملاقات کریں گے۔ شہباز شریف، جاوید مرتضیٰ عباسی اور دیگر رہنما تھوڑی دیر میں اڈیالہ پہنچیں گے۔ نواز شریف کے استقبال کے لیے مسلم لیگ (ن) نے کارکن اڈیالہ جیل کے باہر جمع ہونا شروع ہوگئے ہیں۔

واضح رہے کہ ایون فیلڈ ریفرنس میں احتساب عدالت نے نواز شریف کو 10 سال، مریم نواز کو 7 اور کیپٹن (ر) صفدر کو ایک سال قید کی سزا سنائی ہے جب کہ حسین اور حسن نواز کو اشتہاری قرار دیا گیا ہے۔


اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.