نقیب اللہ قتل کیس کی تحقیقات کرنے والی جے آئی ٹی نے پولیس مقابلے کو جعلی قرار دیدیا

نقیب اللہ محسود قتل کیس کی تحقیقات کرنے والی جے آئی ٹی نے اس پولیس مقابلے کو جعلی قرار دیدیاہے جس کے بعد اب راﺅ انوار بڑی مشکل میں پھنس گئے ہیں اور کوئی بھی وکیل ان کا کیس لڑنے کیلئے تیار نہیں ہے جس کے باعث سابق ایس ایس پی ملیر کافی پریشانی کے عالم میں دوڑ لگاتے ہوئے نظر آ رہے ہیں ۔سابق ایس ایس پی راﺅ انوار کی جانب سے پیپلز پارٹی کے تین نامور وکلاءسے رابطہ کیا گیا جن میں سے دو وکلا ءنے کیس کی پیروی کرنے سے صارف اور کورا انکار کر دیا جبکہ ایک وکیل نے پارٹی قیادت سے مشاورت کرنے کا کہاہے ،پیپلز پارٹی کے تینوں وکلاءکے پاس اعلیٰ قیادت کے مقدمات بھی ہیں تاہم راﺅ انوار نے پیپلز پارٹی چھوڑ کر تحریک انصاف میں شمولیت اختیار کرنے والے وکیل سے بھی رابطہ کیا لیکن انہوں نے بھی عوامی رد عمل کو مد نظر رکھتے ہوئے کسی بھی طرح کی خدمات فراہم کرنے سے معذرت کر لی ہے ۔اچھا اور تجربہ وکیل نہ ملنے کے باعث راﺅ انوار کافی پریشان نظر آ رہے ہیں اور کیس کی پیروی کیلئے تجربہ کاروکیل کی تلاش جاری رکھے ہوئے ہیں ۔


اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.