پرویز مشرف کیس پرفیصلہ عدالتوں نے کیا، حکومت نے عمل کیا: چوہدری نثار

ٹیکسلا:سابق وزیر داخلہ چوہدری نثار کا کہنا ہے کہ پرویزمشرف کیس پرہمارے مخالفین ذراقانونی صورت حال دیکھیں اس کیس پر فیصلہ عدالتوں نے کیاحکومت نے اس پر عمل کیا۔ ملک کے آئین کے مطابق3 سال میں کیس پرفیصلہ نہ ہوتو وہ ای سی ایل سے خارج ہونےکااہل ہوجاتاہے ،اس میں حکومت کی کوئی ملی بھگت شامل نہیں تھی۔انہوں نے کہا کہ پرویزمشرف کو ملک سے باہر جانے کی اجازت ٹرائل کورٹ نے دی ہم ہائی کورٹ گئے تو انہوں نے ٹرائل کورٹ کا فیصلہ برقرار رکھا۔ان کا کہنا تھا کہ ہائی کورٹ کے فیصلے کے خلاف ہمیں اپیل کے لئے 15دن ملے جس پر ہم نے سپریم کورٹ سے رجوع کیالیکن وہاں ہماری درخوا ست مسترد ہوگئی ۔چوہدری نثار کا کہنا تھا کہ حکومت نے پرویز مشرف کا نام ڈھائی سال ای سی ایل میں رکھا جبکہ عدالت میں پرویز مشرف کے وکیل نے کہا وہ علاج کے بعد واپس آجائیں گے۔انہوں نے مزید بتا یا کہ کسی کانام بھی وزیراعظم یاوزیرای سی ایل میں نہیں ڈال سکتا۔


اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.