عمر کوٹ میں بننے والاوومین سیف ہاوس متاثرہ خواتین کوکوئی بھی فائدہ نہ پہنچا سکا

عمرکوٹ :  سال “2010”میں تعمیر ہونے والا خواتین کےلیے سیف ہاوس گزشتہ سات “7”سال سے بند پڑا ہوا ہے متاثرہ خواتین کو حیدرآباد بیھجا جانے لگا توعوامی سماجی حلقوں نےاس سیف ہاوس کو فوری طور پر ورکنگ میں لانے کا مطالبہ کردیا ۔

تفصیلات کےمطابق عمرکوٹ میں خواتین کےلیے سات سال قبل “2010”میں تعمیر ہونے والا وومین سیف ہاوس متاثرہ خواتین کے کسی کام نہ آسکا گذشتہ سات سال سے اس سیف ہاوس کو تالہ لگا کر بند کر دیا گیا ہے ستم ظریفی کی حدتو یہ ہےکہ یہ انکشاف سامنے آیا ہےکہ آج تک اس سیف ہاوس میں ایک بھی متاثرہ خاتون کو پناہ نہیں دی جاسکی ہے مختلف مقدمات میں ملوث خواتین کو حیدرآباد بیھجا جانے لگا محکمہ ریونیو کے ریکارڈ میں یہ سیف ہاوس سات سال سے کام کررہا ہے اور محکمہ ریونیو کے سات “7”ملازم اس سیف ہاوس میں مقرر ہے افسوس کی بات تو یہ ہےکہ عمرکوٹ کی بھی متاثرہ خواتین کو حیدرآباد بیجھا جاتا ہے یہ بھی انکشاف ہوا ہے کہ اس سیف ہاوس کو مبینہ طور پر محکمہ ریونیو کے مختار کار اور تپیدار استعمال کررہے ہیں ۔


اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.