کوئی منصوبہ بندی نہ ہوناہی ملک کی بدقسمتی ہے، جسٹس گلزاراحمد

اسلام آباد: پراسیکیوٹر جنرل نیب کی تقرری کے معاملے کی سماعت کے دوران جسٹس گلزار احمد نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ کوئی منصوبہ بندی نہ ہوناہی ملک کی بدقسمتی ہے، پراسیکیوٹرجنرل نیب کی تقرری میں تاخیرکاذمہ دارکون ہے؟،جسٹس گلزار احمد نے کہا کہ پراسیکیوٹرجنرل نیب نہ ہونے سے ادارے کے بہت سے کام رکے ہیں،کسی کوفائدہ دینے کیلئے تقرری میں جان بوجھ کرتاخیرکی جارہی ہے،ہم نے بھی حساب کتاب کیاہے۔
سپریم کورٹ نے احتساب عدالتوں میں خالی اسامیوں پر ججز کی تقرری کا حکم دیتے ہوئے سیکرٹری قانون سے 2 ہفتے میں رپورٹ طلب کر لی۔اٹارنی جنرل نے سپریم کورٹ سے ایک ہفتے کی مہلت طلب کرتے ہوئے کہا کہ پراسیکیوٹر جنرل نیب کی تقرری ایک ہفتے میں ہو جائے گی اور نامزدگیوں سے متعلق چیف جسٹس اسلام آباد ہائیکورٹ سے رابطہ کروں گا، اسلام آباد کی احتساب عدالت میں جج کی تقرری بھی 10 روز میں ہو جائے گی۔


اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.