Daily Taqat

نئےاتحاد بن رہےہیں، غیرمتوقع بلاک سامنےآرہےہیں, سابق سیکرٹری دفاع آصف یاسین ملک

اسلام آباد : سابق سیکرٹری دفاع لیفٹیننٹ جنرل ریٹائرڈ آصف یاسین ملک نے کہا ہے کہ علاقائی و عالمی سلامتی صورتحال تیزی سے تبدیل ہورہی ہے، نئے اتحاد بن رہے ہیں، غیر متوقع بلاک سامنے آرہے ہیں۔ اس صورتحال میں پاکستان اور افغانستان میں کوئی فرق نہیں، دونوں تیزی سے ہونے والی تبدیلیوں کی رفتار کا حصہ بننے کی کوشش کر رہے ہیں۔ اس تناظر میں خاص طور پر سلامتی کے شعبے میں ایک مشترکہ فریم ورک یا میکانزم پر کام کرنے کی ضرورت ہے جو ’’افغانستان پاکستان ایکشن پلان برائے امن و یکجہتی‘‘ کی صورت میں سامنے آرہا ہے۔ ان خیالات کا اظہار سابق نے بدھ کو یہاں افغان سٹڈی سنٹر کے تحت منعقدہ ’’پاک افغان یوتھ ڈائیلاگ‘‘کے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ آج پاک افغان تعلقات کو عالمی سیاست کے حالات کو مدنظر رکھے بغیر نہیں دیکھا جاسکتا۔ امریکی تسلط آہستہ آہستہ کم ہورہا ہے جس کی ایک وجہ چین اور روس کی عالمی امور میں فعال کردار اور دوسرا ٹرمپ انتظامیہ کی پالیسیاں ہیں۔ انہوں نے کہا کہ جنگ زدہ ملک میں امن صرف علاقائی سوچ سے ہی ممکن ہے جس میں تمام ہمسایوں کو شامل ہونا ہوگا۔ بہت سی ایسی پیشرفت ہوئی ہیں جو پاکستان اور افغانستان میں امن اور کوشحالی کا باعث بن رہی ہیں۔


Get real time updates directly on you device, subscribe now.

اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

Translate »