Daily Taqat

پاکپتن محکمہ اوقاف اراضی کیس میں نوازشریف کو 2 ہفتوں میں جواب جمع کرانے کی مہلت

سپریم کورٹ نے پاکپتن محکمہ اوقاف اراضی کیس میں نوازشریف کو 2 ہفتے میں جواب جمع کرانے کی مہلت دے دی۔ عدالت نے زمین کی منتقلی کا تمام ریکارڈ بھی طلب کرلیا،چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ نواز شریف نے بطور وزیراعلیٰ پنجاب محکمہ اوقاف کی سمری کے خلاف حکم کیسے دیا؟ کیا ایگزیکٹو ہائیکورٹ کے فیصلے کو تبدیل کرسکتا ہے؟نواز شریف کیلئے 33 سال پرانے کیس نے نئی مشکل پیدا کردی۔سپریم کورٹ نے 1985 میں بطور وزیراعلیٰ کئے گئے فیصلے پر جواب مانگ لیا۔پاک پتن میں محکمہ اوقاف کی زمین دیوان قطب کو دینے کے کیس کی سماعت ہوئی۔نوازشریف کے وکیل منور دُگل عدالت میں پیش ہوئے۔ چیف جسٹس نے استفسار کیاکہ محکمہ اوقاف کی سمری کے خلاف نواز شریف نے حکم کیسے دیا؟ وزیراعلیٰ کے پاس ایسا اختیار کہاں سے آگیا؟ کیا ایگزیکٹو ہائی کورٹ کے فیصلے کو اپنے حکم سے تبدیل کرسکتا ہے؟چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ یہ معاملہ سپریم کورٹ میں زیرالتوا تھا۔ نواز شریف نے بطور وزیراعلیٰ عدالت سے اپیل واپس لے کر محکمہ اوقاف کی زمین دیوان قطب کو منتقل کردی جنھوں نےتین روز میں ہی آگے فروخت کردی۔ دیوان قطب کے وکیل افتخار گیلانی نے گزشتہ سماعت پر ہونے والی بدنظمی پر معذرت کر لی۔نوازشریف کے وکیل منور دُگل کاکہنا تھا کہ مجھے آج ہی وکیل مقرر کیا گیا ہے،جواب کیلئے وقت دیا جائے۔ عدالت نے نواز شریف کوجواب کیلئے دو ہفتے کی مہلت دے دی۔ چیف جسٹس نے واضح کیا مزید مہلت نہیں دی جائے گی۔عدالت نے زمین کی منتقلی کا تمام ریکارڈ بھی طلب کرلیا۔کیس کی مزید سماعت نومبر کے دوسرے ہفتے تک ملتوی کردی گئی۔


Get real time updates directly on you device, subscribe now.

اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

Translate »