Daily Taqat

نواز شریف لندن فلیٹس کے بینفیشل اونر ہیں اور نہ ہی انکا کوئی تعلق ہے، خواجہ حارث

احتساب عدالت میں شریف خاندان کیخلاف ایون فیلڈریفرنس کی سماعت میں وکیل خواجہ حارث نے کہا نواز شریف لندن فلیٹس کے بینفیشل اونر ہیں، اور نہ ہی انکا اس سے کوئی تعلق ہے۔ رقوم کی منتقلی حسین نواز اور میاں شریف کے درمیان ہوئی ہیں۔ احتساب عدالت میں شریف خاندان کے خلاف ایون فیلڈ پراپرٹی ریفرنس کی سماعت جج محمد بشیر نے کی۔ وکیل خواجہ حارث نے چوتھے روز حتمی دلائل میں کہا کہ استغاثہ کو لندن فلیٹس کی ملکیت بھی ثابت کرنا تھی۔ واجد ضیاء کا بیان دو حصوں میں تقسیم ہونا ہے۔ بیان حلفی کے مطابق 1974 میں نواز شریف نے گلف سٹیل مل بنائی۔ خواجہ حارث نے کہا کہ نواز شریف کا کسی ٹرانزیکشن سے کوئی تعلق نہیں۔ یہ ٹرانزیکشنز حسین نواز اور میاں محمد شریف کے درمیان ہوئی۔ دستاویزات کی جو فوٹو کاپی پیش کی گئی یہ غیر مصدقہ ہیں۔ فوٹو کاپی کو عدالتی ریکارڈ کا حصہ نہیں بنایا جا سکتا۔

خواجہ حارث نے دلائل میں کہا کہ طارق شفیع کے دوسرے جمع کرائے گئے بیان حلفی میں بھی نواز شریف کا کہیں ذکر نہیں۔ دبئی سٹیل ملز کے معاہدے پر استغاثہ کا انحصار ہے۔ اس میں سب کردار ہیں مگر نواز شریف نہیں۔ خواجہ حارث کا مزید کہنا تھا کہ کیپٹل ایف زیڈ ای تنخواہ 2008 کا معاملہ ہے۔ اگر تنخواہ وصول بھی کی تو اس سے ایون فیلڈ کا کیا تعلق بنتا ہے۔ اس کے بعد کیس کی سماعت پیر تک ملتوی کر دی گئی۔


Get real time updates directly on you device, subscribe now.

اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

Translate »