کراچی:سپریم کورٹ رجسٹری میں نقیب اللہ قتل کیس کی سماعت کا عبوری حکم نامہ جاری

کراچی کی سپریم کورٹ رجسٹری میں نقیب اللہ قتل کیس کی سماعت کا عبوری نامہ جاری کردیا ہے،جس میں چارٹرڈ طیاروں کے مالکان اور زمینی بارڈر کے ذمہ داران سے حلف نامے جمع کروانے کو کہا گیا ہے کہ وہ راﺅانوار کو سرحد پار بھیجنے میں ملوث نہیں ہیں۔
کراچی سپریم کورٹ رجسٹری میں ہونے والی آج کی سماعت کے عبوری حکم نامے میں کہا گیاہے کہ آئی جی سند ھ راﺅ انوار کی گرفتاری کو یقینی بنائیں۔عبوری حکم نامے میں کہا گیا ہے کہ چارٹرڈطیاروں کے ما لکا ن حلف نامے 4روزمیں جمع کرائیں بتایاجائے کہ کیا ان کے طیار ے میں راوانواربیرون ملک فرارہوا ؟جبکہ بارڈر انچارج رپورٹ دیں کہ راﺅا نوار سرحد پار نہیں گئے؟ اس حوالے سے سیکرٹری داخلہ کو تمام زمینی بارڈرز انچارج سے رپورٹ لینے کی ہدایات دی ہیں ۔سپریم کورٹ نے نجی اور پی آئی اے کی ڈگریو ں کی تصدیق کا حکم بھی دے دیا ،سی آئی اے کو ہدایات دی گئی ہیں کہ وہ ایک ماہ کے اندرڈگریو ں کی تصدیق کا عمل مکمل کرے۔


اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.