Daily Taqat

میرا کام فریادی کی فریاد سننا ہے، وہ فریاد سنانے آئے تھے مگر دیا کچھ نہیں، چیف جسٹس کا وزیراعظم سے ملاقات پر کمرہ عدالت میں ردعمل

سپریم کورٹ میں غیر قانونی تعمیرات کیس کی سماعت کے دوران چیف جسٹس ثاقب نثار نے سردار لطیف کھوسہ سے مکالمہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ گزشتہ میٹنگ سے کھویا کچھ نہیں ،پایا ہی ہے ،ہم یہاں معاملات میں مداخلت کیلئے نہیں بیٹھے ۔
چیف جسٹس پاکستان نے کہا کہ اپنے ادارے اور وکلا کو مایوس نہیں کروں گا،عدلیہ کے ادارے اور وکلاا پنے اس بھائی پر اعتبار کریں،چیف جسٹس نے کہا کہ میرا کام فریادی کی فریاد سننا ہے،وہ فریاد سنانے آئے تھے مگر دیا کچھ نہیں ،چیف جسٹس نے کہا کہ میر ی ذمہ داری ہے کہ سائل کی تکلیف کوسنوں۔
اس پر سردار لطیف کھوسہ نے کہا کہ جسٹس (ر)عبدالرشید والی صورتحال تھی،چیف جسٹس نے کہا کہ سر عبدالرشید ملاقات کیلئے چل کر گئے تھے، میں نے ان کے گھر جانے سے انکار کیا اور وہ میرے گھر چل کر آئے تھے ۔


Get real time updates directly on you device, subscribe now.

اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

Translate »