کرپٹ افراد سے 300 ارب سے زائد وصول کر کے خزانے میں جمع کراچکے ہیں، نیب

چیئرمین نیب جسٹس (ر) جاوید اقبال نے کہا ہے کہ کرپٹ افراد سے 303 ارب وصول کر کے خزانے میں جمع کرا چکے ہیں۔ ان خیالات کا اظہار انھوں‌ نے بزنس کمیونٹی سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ ان کا کہنا تھا کہ ملک کی ترقی میں بزنس کمیونٹی کا کردار اہم ہے۔

چیئرمین نیب کا کہنا تھا کہ بیرون ملک فرار افراد کو واپس لانے کے لئے وسائل استعمال کر رہے ہیں، نیب کرپشن کے خاتمے کو اپنی ذمہ داری سمجھتا ہے، کرپشن کے خاتمے کے لئے تمام طبقوں کو کردار ادا کرنا ہوگا۔

جسٹس (ر) جاوید اقبال کا کہنا ہے کہ ملک کا تاجر خوشحال ہوگا تو ملک خوشحال ہوگا۔ جنہوں نے ملک کو لوٹا، آج ان کے بہت سے اثاثے ہیں، ملک لوٹنے والوں کی مختلف ممالک میں پلازے اور قیمتی جائیدادیں ہیں۔

چیئرمین نیب جاوید اقبال کا کہنا تھا کہ سوال یہ ہے کہ یہ رقم کہاں سے آئی، نیب تفتیش کے دوران کسی کی عزت نفس مجروح نہیں کرتا۔ انھوں نے مزید کہا کہ عزت، احترام اور وقار کے ساتھ نیب میں طلب کرتے ہیں، وقار کا خیال رکھا جاتا ہے۔  جج کی حیثیت سے ہمیشہ لوگوں کے دل دکھوں کا مداوا کیا۔


اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.