پنجاب شہباز شریف اور رانا ثناءاللہ کو استعفیٰ دینا ہوگا ،نواز شریف پر 302 کا مقدمہ چلایا جائے،آصف علی زرداری

پاکستان پیپلز پارٹی کے شریک چیئرمین آصف علی زرداری نے کہا ہے کہ سانحہ ماڈل ٹاﺅن کے حوالے سے آل پارٹیز کانفرنس میں جو فیصلہ کیا جائے گا ہم اسے قبول کریں گے، ماڈل ٹاﺅن میں قتل عام کو سارا دن میڈیا پر دکھایا گیا ، وزیر اعلیٰ پنجاب شہباز شریف اور وزیر قانون رانا ثناءاللہ اس قتل عام میں ملوث ہیں، ان دونوں کو فوری طور پر مستعفی ہونا پڑے گا اور نواز شریف پر302کا مقدمہ ہونا چاہیے۔ آصف علی زرداری کی قیادت میں پیپلز پارٹی کے اعلیٰ سطحی وفد نے ماڈل ٹاﺅن میں طاہر القادری سے ملاقات کی اور سانحہ ماڈل ٹاون کیس پر مشاورت کی ، اس موقع پر مشترکہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے آصف علی زرداری کا کہنا تھا کہ لوگ کہتے ہیں کہ ماڈل ٹاﺅن میں14شہید ہیں مگر میں تو کہتا ہوں100شہید ہیں ، کیوں کہ جو شہید ہوگیا اس کی دعا مانگ لیتے ہیں مگر اس واقعے کے متاثرین کو تو ساری زندگی میں دیکھتے ہیں۔ پیپلز پارٹی نے ہمیشہ ظلم کے خلاف آواز اٹھائی اور مظلوم کے ساتھ کھڑے ہوئے ہیں۔ قادری صاحب کے ساتھ ہمارا پرانا رشتہ ہیں، شہباز شریف اور رانا ثناءاللہ کواستعفیٰ دے کر قانون کے سامنے پیش ہونا پڑے گااور نواز شریف پر 302کا پرچہ ہونا چاہیے۔ اگر یہ خود استعفیٰ دینے کے لئے تیار نہیں ہوں گے توہم ان سے انصاف لیں گے۔طاہر القادری نے اے پی سی کی دعوت دی وہ ہم نے قبول کی ہے اور ہم آل پارٹیز کانفرنس کے فیصلوں کو ہم لے کر چلیں گے۔


اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.