اہم خبرِیں
مانچسٹر ٹیسٹ، تیسرے روز کے کھیل میں پاکستان کا پلڑا بھاری تحفظ اسلام بل کیخلاف پنجاب اسمبلی میں شدید احتجاج امریکا میں ٹک ٹاک اور وی چیٹ پرپابندی نیب نے وائٹ کالر کرائم کی تفتیش کے لئےسیل قائم کردیا پولیس، پٹوار کلچر میں کرپشن ہورہی ہے، عمران خان پنجاب حکومت 50 کروڑ ڈالرقرض لے گی پارک لین ریفرنس، آصف زرداری کی درخواست مسترد لڑکی کی لڑکی سے شادی کیس، دلہا کا نام ای سی ایل میں شامل بھارت میں سیکڑوں مساجد مندروں میں تبدیل نوازشریف کو سزا دینے والے جج برطرف ایم ایل ون منصوبہ میری زندگی کا مشن تھا، شیخ رشید پاکستان کا نیا نقشہ گوگل سمیت تمام سرچ انجنز کو بھجوانے کا فیص... حکومت کا ہوٹل، پارکس، سیاحتی مقامات کھولنے کا اعلان ملک میں کوروناکیسزمیں کمی، 21 اموات رپورٹ آبی ذخائر میں پانی کی آمد و اخراج کی صورتحال کلبھوشن یادیو کے معاملے پر پاکستان کا بھارت سے پھررابطہ احساس پروگرام کے تحت 169 ارب روپے تقسیم پاکستان نے سعوی عرب کا قرضہ واپس کر دیا پاکستان کو 40 کروڑ ڈالر قرضوں کی منظوری برطانوی خلائی کمپنی "سپر سانک" کمرشل طیارہ بھی بنائے گی

اگر (این آراو) لیناہوتا تو نوازشریف اپنی بیٹی کےہمراہ جیل جانے کیلئے لندن سے واپس نہ آتے، مریم اورنگزیب

اسلام آباد :  مسلم لیگ ن کی ترجمان مریم اورنگزیب کہتی ہیں  کہ اگر این آر اولینا ہوتا تو نواز شریف اپنی بیٹی کے ہمراہ جیل جانے کے لئے لندن سے واپس نہ آتے۔ وزیراعظم کے خطاب پر ردعمل میں انہوںنے کہا کہ ان سے کس نے این آر او مانگا ہے جس کے دائیں بائیں کرپٹ اور چور بیٹھے ہوں ۔ اس سے این آر او کوئی نہیں مانگتا۔ اگر این آر او کرنا ہوتا تو نواز شریف اور ان کی صاحبزادی جیل جانے کے لئے بیمار کلثوم نواز کو چھوڑ کر لندن سے وا پس نہ آتے۔ ہم احتساب کے عمل سے گزر رہے ہیں ۔احتساب عدالت ہائی کورٹ اور سپریم کورٹ سمیت ہر عدالت کا سامنا کر رہے ہیں۔ نواز شریف نے دن رات محنت کر کے قوم کی خدمات کی ۔ وزیراعظم ہمارے دور کے تمام قرضوں کا آڈٹ کروانے کا شوق پورا کر لیں ۔ دوسروں پر الزام لگانے کی بجائے اپنی65دن کی کارکردگی عوام کو بتائیں۔ دریں اثناءمسلم لیگ (ن) کے رہنما سعد رفیق نے کہا ہے کہ احتساب اور انصاف کے نام پر انتقام نہیں چلے گا۔ انہوں نے کہا کہ عمران خان شوشے نہ چھوڑیں وہ قوم کو بتائیں کہ ان سے کب اور کس نے اور کیسے این آر او مانگا ہے۔ حکومت کی نااہلی چھپانے کے لئے لوگوں کو احتساب کے ٹرک کی بتی کے پیچھے لگایا جارہا ہے۔ مہنگائی کے ذمہ دار حکمران اور دوسروں پر ملبہ ڈال کر خود کو بچانا چاہتے ہیں۔ کرپٹ لوگوں میں گھرا شخص دوسروں کو دیانت کا سبق کیسے دے سکتا ہے۔ 2 ماہ میں ملک کا دیوالیہ نکالنے والوں کا حتساب ضرور ہوگا۔

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.