لاہور پریس کلب کے باہر دھرنا دینے والے نابینا افراد سے مذاکرات کئے جائیں گے ،سینیٹرسعود مجید

مسلم لیگ ن کے سینیٹر سعود مجید نے حکومت کی جانب سےلاہور پریس کلب کے باہر دھرنا دینے والے نابینا افراد سے مذاکرات کئے اور انہیں ان کے تمام تر مطالبات پورے کرنے کی مکمل یعقین دہانی کروائی گئی۔

سینیٹر سعود مجید نے نابینا افراد کو مذاکرات کے دوران یقین دلواتے ہوئے کہا  کہ معذور افراد کے لئے خدمت کارڈ کے معاوضے میں اضافہ کیا جائے گا۔ اور انہیں یہ بھی یعقین دلوایا کہ محکمہ پولیس میں بھی معذور افراد کا کوٹہ رکھا جائےگا۔ اور باقا عدہ اس کی وزیراعلی پنجاب سے سفارش کی جائے گی۔ سینیٹر سعود مجید نے اس موقع پرکہاکہ معذور افراد کے لئے نو سو نئی نوکریوں کا دور بھی شروع کیا گیا ہے۔ جن کی بنیاد ڈیلی ویجز پر رکھی گئی ہے۔  مزید برآں معذور افراد کی نئی نوکریوں پر بھرتی کے لئے اخبارات میں اشتہارات دئیے جائیں گے۔

اس موقع پر نابینا افراد کے نمائندوں نے کہا کہ ہمیں حکومت کی یقین دہانی پر اعتماد ہے، اسی لئے مطالبات تسلیم کئے جانے کی یقین دہانی پر اپنا دھرنا ختم کر رہے ہیں اور اگر مطالبات تسلیم نہ کئے گئے تو پندرہ روز کے بعد دوبارہ سڑکوں پر ہونگے۔

نابینا افراد کا دھرنا ختم ہونے کے بعد لاہور پریس کلب کے باہر کل رات سے بند سڑک کو عام ٹریفک کے لئے کھول دیا گیا۔


اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.