لاہور: ائیرپورٹ پرایک 22 سالہ لڑکی سے ہیروئن برآمد

لاہور:  ایئرپورٹ پر کسٹمز حکام نے ابوظہبی جانے والی غیر ملکی خاتون سے 9 کلو ہیروئن برآمد کر لی ، جس کی ملایت عالمی منڈی میں 9 کروڑ روپے سے زائد ہے تاہم ملزمہ کو ایئر پورٹ سے کسٹمز ہاؤس منتقل کرکے تفتیش شروع کر دی گئی ہے۔

کسٹمز انوسٹی گیشن سیل کےمطابق چیک ری پبلک کی رہائشی 22 سالہ ملزمہ لاہور سے ابو ظہبی جارہی تھی اور اس کے ویزے پر نام ’ٹیریزا‘ درج ہے۔

وہ انٹی نارکو ٹکس فورس کے کا ؤنٹرزسے گزر گئی تھی تاہم کسٹمز حکام نے خاتون کو مشکوک جان کر اس کے سامان کی تلاشی لی تو اس میں چھپائی گئی9کلو ہیروئن برآمد ہوگئی۔

خاتون سے منشیات برآمد ہونے کے بعد اسے حراست میں لینے کے لیے کسٹم اور اے این ایف حکام آپس میں ہی الجھ پڑے اور ایک دوسرے کو قانونی داؤ پیچ سکھانے لگے تاہم کسٹم حکام نے کچھ دیر کی بحث و تکرار کے بعد خاتون کو اپنی حراست میں لے لیا۔

ذرائع کے مطابق ملزمہ کی نشاندہی پرشہر کےمختلف علاقوں میں چھاپے مارنا شروع کر دیئے گئے ہیں جبکہ ابتدائی تفتیش میں معلوم ہوا ہے کہ ملزمہ نے 30 دن کا فیملی ویزہ حاصل کررکھا تھا۔

کسٹمز حکام کی مزید تفتیش جاری ہے کہ ملزمہ پاکستان میں آمد کے بعد کن لوگوں کے ساتھ ملتی رہی اور اس کی مصروفیات کیا تھیں


اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.