قصور میں بچوں کی فحش فلمیں بنانے میں اہم وفاقی وزیر کے دوست شامل

ایک اہم وفاقی وزیر اپنے بیرون ملک مقیم دوست کے ساتھ مل کر بچوں کی فحش فلمیں بنانے کا دھندا کر رہا ہےاہم شخصیت کے پارٹنر دوست نے ہی ملزم عمران کے بارے میں مجھے تفصیلات فراہم کیں، ایک شخصیت کا نام لکھ کر سپریم کورٹ کو دے دیا ہے، سینئر صحافی و تجزیہ کار ڈاکٹر شاہد مسعود کی زینب قتل ازخود نوٹس کیس کی سماعت میں سپریم کورٹ طلبی کے بعد میڈیا سے گفتگو۔ تفصیلات کے مطابق سینئر صحافی و تجزیہ کار ڈاکٹر شاہد مسعود نے زینب قتل ازخود نوٹس کیس کی سماعت میں سپریم کورٹ طلبیکے بعد میڈیا سے گفتگوکرتے ہوئے کہا کہ ایک اہم وفاقی وزیر اپنے بیرون ملک مقیم دوست کے

ساتھ مل کر بچوں کی فحش فلمیں بنانے کا دھندا کر رہا ہے ۔ اہم شخصیت کے پارٹنر دوست نے ہی ملزم عمران کے بارے میں مجھے تفصیلات فراہم کی ہیں۔ان کا کہنا تھا کہ انہوں نے ایک شخصیت کا نام لکھ کر سپریم کورٹ کو دے دیا ہے ، وہ ایک اعلیٰ حکومتی شخصیت ہے جو اپنے بیرون ملک مقیم دوست کے ساتھ مل کر کام کر رہی ہے۔ ڈاکٹر شاہد مسعود نے انکشاف کرتے ہوئے کہا کہ کم سن بچوں کی فحش فلموں کا مکروہ دھندا کرنے والی شخص وفاق اور پنجاب حکومت کی انتہائی اہم شخصیت ہے۔انہوں نے مزید انکشاف کرتےہوئے کہا کہ یہ تفصیلات کےمجھے اس اہم شخصیت کے دوست سے ملی ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ انہوں نے سپریم کورٹ کو زینب کے قاتل کی زندگی سے متعلق خطرات سے آگاہ کر دیا ہے اور اپیل کی ہے کہ قاتل کی زندگی کو لاحق خطرات کے پیش نظر اس کی سکیورٹی میں اضافہ کیا جائے جس پر میری درخواست پرسپریم کورٹ نے قاتل عمران کی سکیورٹی بڑھاتے ہوئے آئی جی پنجاب اور آئی جی جیل خانہ جات کو قاتل عمران کی سکیورٹی کا ذاتی طور پر ذمہ دار قرار دیا ہے۔


اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.