کراچی: سپریم کورٹ نے 6منزلہ عمارت تعمیرکرنے کی پابندی کھول دی

کراچی : سپریم کورٹ نے کراچی میں 6منزلہ عمارت کی تعمیرات کی اجازت دے دی، تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ کراچی رجسٹری میں کثیرالمنزلہ عمارتوں پرپابندی کیخلاف درخواست کی سماعت ہوئی ،سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی،کے ڈی اے اورمتعلقہ حکام عدالت میں پیش ہوئے،چیف جسٹس ثاقب نثار کی سربراہی میں تین رکنی بنچ نے مقدمے کی سماعت کی۔
دوران سماعت چیف جسٹس ثاقب نثار نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ ہمیں احساس ہے پابندی سے مسائل پیداہوئے اور سب سے پہلے مزدورمتاثرہواجوملک بھرسے یہاں آتے ہیں،چیف جسٹس نے کہاکہ مافیا کی باتیں سب کرتے ہیں،نام کوئی نہیں لے رہا،کھل کربات کریں،مافیامیں کون کون شامل ہے،انہوں نے کہا کہ شہرمیں بلند ترین عمارتوں کی وجہ سے مسائل پیداہورہے ہیں،چیف جسٹس ثاقب نثار نے استفسار کیا کہ بلندعمارتوں کی اجازت کون دیتا ہے؟،
اس پر ایڈووکیٹ جنرل نے کہا کہ سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی این اوسی جاری کرتی ہے،اس کے علاوہ دیگرمحکمے بھی این اوسی جاری کرتے ہیں۔
چیف جسٹس نے بلڈرزسے استفسار کیا کہ شہری سٹرکچر کے مطابق کتنی منزلوں کی اجازت ہونی چاہئے،اس پر بلڈرز نے کہا کہ جتنی اونچی عمارت تعمیر کرنے کا کنٹریکٹ ملا ہے وہ تعمیر کرنے کی اجازت دی جائے۔
چیف جسٹس نے کراچی میں 6 منزلہ عمارت کی تعمیر کی اجازت دیتے ہوئے کہا کہ عدالتی حکم کی خلاف ورزی پرکارروائی کی جائے گی،انہوں نے کہاکہ ایک بلڈرکو جیل بھیجے گئے تو سب ٹھیک ہو جائیں گے، 6 منزل سے اونچی عمارت کی تعمیر پرتمام الاٹیزکی رقم واپس کی جائے گی۔


اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.