اہم خبرِیں
گوگل بھارت میں دس ارب ڈالر کی سرمایہ کاری کرے گا بھوک بڑھنے سے 12 ہزار افراد روزانہ ہلاک ہو سکتے ہیں، رپورٹ امریکی شہر کیلی فورنیا میں کورونا نے تباہی مچا دی پاکستان نیوی کے بحری بیڑے میں نئے اور جدید بحری جنگی جہازپی ای... معاشرے میں بگاڑ کے اسباب ”کشمیریوں کی زندگی کی بھی اہمیت ہے“ مجھے دشمن کے بچوں کو پڑھانا ہے پاکستان ترقی کا ہدف حاصل کرنے میں کامیاب، اقوام متحدہ کی رپورٹ... امریکی بحری جنگی جہاز میں دھماکا، 21 افراد زخمی سعودی عرب میں تیل کی تنصیبات پرمیزائلوں سے حملہ دنیا بھر میں آج یومِ شہدائے کشمیر منایا جائے گا پاکستان فرانسیسی شعبہ زراعت اور شعبہ حیوانات کی مہارت سے استفا... میر شکیل الرحمان کی ہمشیرہ کے انتقال پر سی پی این ای کا تعزیت ... شمالی وزیرستان، پاک فوج کا آپریشن، چاردہشت گرد جہنم وصل گھوٹکی ٹرین حادثے کو پندرہ سال بیت گئے پاکستان میں کورونا کے 2 ہزار 521 نئے کیسز،74 اموات انگلستان کی پاکستان میں ڈھائی لاکھ ڈالر کی سرمایہ کاری آیاصوفیہ مسجد کی کہانی ” آپ ایسا کریں کہ آپ کل آ جائیں“ اسٹیٹ بینک کےقوانین کی خلاف ورزی پر 15 کمرشل بینکوں کو بھاری ...

کراچی: بچوں کی اموات کے بعد سیل ریسٹورنٹ کے گودام سے ایکسپائر بوتلیں اور سڑا گوشت برآمد

شہرِ قائد میں مضرِ صحت کھانا کھانے سے بچوں کی اموات کے بعد سیل کیے جانے والے ریسٹورنٹ کے دوسرے گودام سے زائد المیعاد کھانے پینے کی اشیا بر آمد ہو گئیں۔ تفصیلات کے مطابق کلفٹن میں سیل کیے جانے والے معروف ریسٹورنٹ کے دوسرے گودام سے ایک سال پرانی زائد المیعاد شربت کی سیکڑوں بوتلیں بر آمد ہوئی ہیں۔

ریسٹورنٹ کے دوسرے گودام پر چھاپے کے دوران 70 کلو سے زائد سڑا ہوا گوشت بھی بر آمد کر لیا گیا، سڑا ہوا گوشت اور زائد المیعاد شربت کا سیمپل لینے کے بعد تلف کر دیا جائے گا۔ ریسٹورنٹ انتظامیہ نے تفتیش کے دوران کسی دوسرے گودام کی موجودگی سے انکار کیا تھا، تاہم انتظامیہ کے مشکوک بیان پر ریسٹورنٹ کے اطراف علاقوں کی نگرانی کی گئی. خفیہ نگرانی کے دوران ریسٹورنٹ انتظامیہ کو زائد المیعاد شربت اور گوشت منتقل کرتے ہوئے رنگے ہاتھوں پکڑا گیا۔

ریسٹورنٹ مالکان سے سندھ فوڈ اتھارٹی کے افسران اور پولیس رابطے کی کوشش کر رہی ہے۔ سندھ فوڈ اتھارٹی کے ڈائریکٹر ڈاکٹر ابرار شیخ نے کہا کہ ہم کوشش کر رہے ہیں لیکن ریسٹورنٹ مالکان رابطے میں نہیں آ رہے۔

دوسری طرف سر بہ مہر ریسٹورنٹ کی سیل انتظامیہ نے توڑ دی، انتظامیہ نے ریسٹورنٹ سے کھانے پینے کا سامان نکالنے کی کوشش کی، سندھ فوڈ اتھارٹی کا کہنا ہے کہ ریسٹورنٹ کیس سرکار کی پراپرٹی ہے، انتظامیہ سیل نہیں توڑ سکتی۔ پولیس متاثرہ خاندان کے گھر، پلے لینڈ اور ریسٹورنٹ سے اکھٹے کیے گئے نمونے لے کر آج لاہور جائے گی، جہاں یہ نمونے پنجاب فارنزک سائنس لیبارٹری میں جمع کرائے جائیں گے۔

خیال رہے کہ دو روز قبل شہرِ قائد کے علاقے کلفٹن میں مضرِ صحت کھانا کھانے سے 2 بچے جاں بحق ہو گئے تھے، پولیس نے فوڈ ڈیپارٹمنٹ کی ٹیمیں طلب کر کے تحقیقات کا آغاز کر دیا ہے۔


Get real time updates directly on you device, subscribe now.

اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.