Daily Taqat

کراچی: مسلم لیگ ن کے رہنما پر حملہ، فائرنگ کے نتیجے میں 3 افراد زخمی

لیاری میں ملزمان کا مسلم لیگ ن کے رہنماپر حملہ۔ فائرنگ کے نتیجے میں مقامی رہنما سمیت 3 افراد زخمی ہوگئے، ملزمان نے فرار ہونے کے بعد کچھ فاصلے پر دستی بم حملہ بھی کیا۔ جس کے نتیجے میں ایک شخص زخمی ہوگیا۔ لیاری میں فائرنگ اور دستی بم حملے کے واقعہ کے بعد علاقے میں شدید خوف و ہراس پھیل گیا، اور بھگڈرمچ گئی۔ واضح رہے کہ مسلم لیگ ن کے رہنما کے دفتر پر اس سے قبل بھی دستی بم حملے ہوچکے ہیں۔ پولیس نے زخمی ہونے والے دیگر افراد سے بھی تفتیش شروع کردی گئی ہے۔

تفصیلات کے مطابق کلاکوٹ تھانے کی حدود لیاری غریب شاہ مزار کے قریب نامعلوم ملزمان آئے اور فائرنگ کردی۔ جس کے نتیجے میں مسلم لیگ کے مقامی رہنما عقیل رحمانی ولد یوسف، عثمان ولد بشیر احمد اور اسعد اللہ رحیم زخمی ہوگئے۔ فائرنگ کے نتیجے میں علاقے میں خوف و ہراس پھیل گیا۔ پولیس کا کہنا ہے کہ ملزمان نے مسلم لیگ ن کے رہنما عقیل رحمانی کو نشانہ بنایا تھا، وہ شدید زخمی ہیں۔ جبکہ دیگر زخمیوں کی معلومات لی جارہی ہیں کہ وہ کون ہیں اور وہاں کیا کررہے تھے۔ کہیں وہ ملزموں کے ساتھ تو نہیں تھے، واقعہ کے بعد جیسے ہی پولیس اور رینجرز وہاں پہنچی تو ملزمان نے فرار ہوتے وقت بزنجو چوک کے قریب دستی بم سے حملہ کیا۔ جس کے نتیجے میں 38 سالہ عمران ولد اشتیاق نامی شخص زخمی ہوگیا۔ زخمیوں کو سول اسپتال منتقل کیا گیا۔ پولیس کا کہنا ہے کہ ابھی اس حوالے سے تفتیش جاری ہے اور ملزموں کی تلاش میں پولیس اور رینجرز نے کارروائیاں شروع کردی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اس سے قبل بھی عقیل رحمانی کے دفتر پر دستی بموں سے حملہ ہوچکا ہے اور اس بار عقیل رحمانی کو نشانہ بنایا گیا۔ جو اس وقت دفتر میں موجود تھے۔ پولیس بزنجو چوک پر دستی بم حملہ کرنے والا ملزم بھی زخمی ہو گیا، جسے سول اسپتال سے گرفتار کر لیا گیا۔


Get real time updates directly on you device, subscribe now.

اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

Translate »