اہم خبرِیں
رام اوردام تحفظات کا تحفظ (سیف سٹی اتھارٹی) تیرا یار میرا یار ۔۔۔ عثمان بزدار پنجاب میں اسمارٹ لاک ڈاؤن ختم افغانستان، جیل پر حملہ، تین افراد ہلاک، متعدد قیدی فرار بینکوں کے معمول کے اوقات کار بحال آدم علیہ السلام کے بعد کعبہ شریف میں عبادت کرنے والی واحد خاتو... امریکی خلا باز زمین پرواپس پہنچ گئے کورونا کیسزگھٹ کر25 ہزار172 رہ گئے عشرئہ ذو الحجہ اورعیدا لاضحی کے فضائل واحکام پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافہ قوم کشمیریوں کے ساتھ کھڑی ہے، شاہ محمود قریشی ملک میں کورونا کے فعال مریضوں کی تعداد 25 ہزار رہ گئی افغانستان، صوبہ لوگر میں خودکش حملہ، 17 افراد ہلاک حجاجِ کرام آج رمی جمار اور قربانی میں مصروف مریخ کے پہلے راؤنڈ ٹرپ پرخلائی گاڑی "پرسویرینس" روانہ افغان حکومت کے بعد طالبان کا بھی تمام قیدی رہا کرنے کا اعلان پی ایس ایل بورڈ اور فرنچائزز کے تعلقات کشیدہ بیٹی نے قبر کشائی کر کے والد کی میت نکال لی راجن پور، سی ٹی ڈی کی کارروائی، 5 دہشت گرد ہلاک

اسلام آباد: صدر مملکت ممنون حسین نے کہا ہے کہ دہشت گردی کے خلاف ہمیں قومی بیانیہ مرتب کرنا ہوگا۔

اسلام آباد میں سیرت النبی کانفرنسﷺ سے خطاب کرتے ہوئے صدر ممنون حسین نے کہا کہ شدت پسندی ناسور اور قومی ترقی کے لیے زہرقاتل ہے، آج دنیا پیچیدہ مسائل کا شکار ہے اور ان پیچیدہ مسائل کےحل کے لیے سیرت نبویﷺ سے رہنمائی بہترین راستہ ہے۔

انہوں نے کہا کہ ہماراخطہ بھی اس بےچینی سے محفوظ نہیں جس کے اثرات نظر آتے ہیں۔

صدر مملکت نے پشاور حملے کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ عید میلادالنبیﷺ کے موقع پر بدبختوں نے پشاور میں حملہ کیا، حملہ کرنے والوں کا کسی مذہب سے تعلق نہیں۔

صدر ممنون حسین کا کہنا تھا کہ دہشت گردی کے خاتمے کےلیے  قومی اتحاد وقت کی ضرورت ہے اور قوم دہشت گردی کے خاتمے کے لیے پرعزم ہے، ہمیں دہشت گرد کے خلاف قومی بیانیہ مرتب کرنا ہوگا۔


Get real time updates directly on you device, subscribe now.

اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.