انتظار قتل کیس کی تفتیش میں نیا موڑ:پنجاب پولیس

کراچی میں پولیس کے ہاتھوں قتل ہونے والے انتظار حسین کے کیس کی تفتیش کے مطابق مقتول انتظار کی لیلیٰ نامی لڑکی سے دوستی تھی اور انتظار نے لیلیٰ سے الگ ہونے سے انکار کردیا تھا۔  انتظارکی لیلیٰ نامی لڑکی سے دوستی تھی جبکہ لیلیٰ سے کسی اعلیٰ پولیس افسراورسیاسی شخصیت کی بھی دوستی تھی ،مدیحہ کیانی نے 2 بارانتظارکولیلیٰ سے دوررہنے کامشورہ دیا مگر مقتول نے لیلیٰ سے الگ ہونے سے انکار کردیاتھا، یہی نہیں لیلیٰ نامی لڑکی ملیشیا میں انتظار سے ملنے گئی تھی اور انتظار اسی کے کہنے پر ملیشیا سے کراچی واپس بھی لیلیٰ کے کہنے پر آیا تھا۔ قتل کے روز مدیحہ کوانتظار کے پاس پولیس افسرنے’’خاص پیغام‘‘دیکربھیجاتھااورڈیفنس کے کلب میں انتظار،لیلیٰ اورمدیحہ کوآئس پیتے بھی دیکھاگیاتھا۔ انتظارکے موبائل ڈیٹاریکارڈسے تمام صورتحال سامنے آجائے گی اور تفتیشی ٹیم نے لیلیٰ کی تلاش بھی شروع کردی ہےبیان میں مدیحہ کا کہنا ہے کہ وہ سابق ایس ایس پی مقدس حیدرکونہیں جانتی۔


اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.