وکیل کے دلائل نہ دینے پر پنجاب پروونشنل کو آپریٹو بینک کی درخواست خارج

لاہور : چیف جسٹس ثاقب نثار نے سپریم کورٹ لاہور رجسٹری میں بینکنگ کورٹ کے دائرہ اختیار کیخلاف پنجاب پروونشنل کوآپریٹو بینک کی درخواست خارج اورعدالت کے رو برو دلائل دینے سے انکار پر وکیل کی سرزنش کر دی، تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ لاہوررجسٹری میں بینکنگ کورٹ کے دائرہ اختیارکیخلاف کیس کی سماعت ہوئی، چیف جسٹس ثاقب نثار کی سربراہی میں 3رکنی بنچ نے سماعت کی،بنچ میں جسٹس عمر عطابندیال اورجسٹس اعجاز الاحسن شامل ہیں۔
دوران سماعت چیف جسٹس ثاقب نثار نے وکیل صفائی کو دلائل دینے کیلئے کہا تو ایڈووکیٹ جاوید اقبال نے دلائل دینے سے انکار کر دیا،اس پر چیف جسٹس آف پاکستان نے عدالت کے روبرو دلائل دینے سے انکار پر وکیل کی سرزنش کر دی اورپنجاب پروونشنل کوآپریٹو بینک کی درخواست خارج کردی، ایڈووکیٹ جاوید اقبال کی عدالت سے غیرمشروط معافی منظورمعافی مانگ لی،اس پر عدالت نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ سول مقدمات کی پیروی کرنے والے وکیل کے ذہن میں کوئی ابہام نہیں ہوناچاہئے۔


اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.