ہماری حکومت آئی تو ہر شہر سے موٹر وے گزرے گا، نوازشریف

ہری پوری: سابق ویزاعظم نوازشریف نے کہاہے کہ وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے مجھے کہا کہ ہزار موٹر وے کا افتتاح آپ نے کرناہے ،میرا دل بہت چا رہا تھا کہ جا کر معائنہ کروں لیکن میرا دل  بہت دکھ ہے ، جتنے جذبے سے میں خدمت کررہا تھا اس کا ان لوگوں نے صلہ ٹھیک نہیںدیا اور صرف ایک اقامے پر کہ تم نے اپنے بیٹے سے تنخواہ نہیں لی اس لیے تم نا اہل ہو۔عمران خان پارلیمنٹ پر لعنت بھیجتا ہے ،میں نے پہلے بھی کہا تھا کہ جس تھالی میں کھاتا اسی میں چھید کرتاہے ،،میں سلام پیش کرتاہوں ان معزز ججوں کو جنہوں نے اسے صادق اور مین قرار دیا،اس نے مانا اور اقبال جرم کیا ہاں یہ نیازی سروسز میری کمپنی ہے ،لاکھوں پاﺅنڈ اس کے اندر ہیں اور بنی گالہ کے لیے چار چار مرتبہ بیانات بدلے ،وہ جج اس کے بعد کہتے ہیں نیازی صاحب یہ آپ نہیں کہ رہے وہ کوئی اور نیازی جس کی یہ نیازی کمپنی ہے ، میں وعدہ کرنے لگا ہوں اور اس کی 2018 تجدید کروں گا اگر آپ نے ن لیگ کو ووٹ دیا تو صرف یہ موٹروے نہیں بنے گابلکہ ہر شہر سے موٹروے گزرے گا ، بے گھر افراد کو انتہائی آسان اقساط پر اپنے گھر دیئے جائیں گے جو کہ پانچ یا دس سال میں ان کی ملکیت ہو جائیں گے ۔
سابق وزیراعظم نوازشریف نے ہری پورمیں خطاب کرتے ہوئے کہا کہ یہ منظرنہ پہلے کبھی دیکھا ہے ،انشااللہ آئندہ ضرور دیکھیںگے ،لوگ کہتے تھے کہ کوٹ مومن کا بہت بڑا جلسہ تھا ، ہری پور والو آپ کسی کوٹ مومن سے کم نہیں ہو ،یہ جوش و خروش، آپ کے اس پیار پر اور محبت پر نوازشریف قربان ہے،ہری پور کے دوستو نوازشریف آپ کی محبت کو زندگی بھر نہیں بھولے گا ،آپ نے ہمیشہ نوازشریف کی لاج رکھی ہے ،آپ نے ہمیشہ مجھے عزت دی ہے ،آپ نے ہمیشہ نوازشریف سے بڑی محبت اور پیا رکیاہے ،میں انشااللہ آپ کی زندگی بھر خدمت کرتا رہوں گا ۔
نوازشریف کا کہناتھا کہ میر ی بڑی خواہش تھی کہ میں موٹر وے دیکھوں اور دل ٹرپتا تھا بڑی محبت اور پیار سے موٹروے بنوائی ہے اور کئی دفعہ آیا بطور وزیراعظم موٹر وے کو بنتے ہوئے دیکھنے کیلئے اور جب اس کا افتتاح ہو رہاتھا تو ہمارے وزیراعظم نے مجھے کہاکہ موٹر وے افتتاح آپ نے کرناہے، مجھے کہنے لگے آپ میرے ساتھ چلیں ،میرا دل تو بہت چاہتاہے کہ ہزارہ موٹر وے کا جاکر معائنہ کروں لیکن میرا دل بڑا دکھی ہے ،اور جتنے جذبے سے میں خدمت کررہا تھا اس کا ان لوگوں نے صلہ ٹھیک نہیںدیا اور صرف ایک اقامے پر کہ تم نے اپنے بیٹے سے تنخواہ نہیں لی اس لیے تم نا اہل ہو۔
نوازشریف کا کہناتھا کہ آپ نے گھبرانا نہیں ہے ،آپ نے ڈیوٹی لگائی تھی کہ نوازشریف یہ لوڈ شیڈنگ ختم ہونی چاہیے،وہ ختم ہوئی یا نہیں ،یہ کوئی چھوٹی بات نہیں ہے۔ نوازشریف نے عمران خان کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ نیا پاکستان بنانے والے لاڈلے سنو ،یہ خلق خدا کیا کہتی ہے ،یہ تمہارے بارے میں کیا رائے رکھتی ہے،تم نے ہمیشہ گالیوں، الزامات کی سیاست کی ہے ،تمہارے صوبے میں جہاں تمہاری حکومت ہے یہ تمہارا نہیں یہ ہمارا بھی بہت بڑا صوبہ ہے ،تم بتاﺅ تم نے کے پی کے کیلئے کیا کیاہے ۔ ان کا کہناتھا کہ صوبے میں تمہاری حکومت ہے اور موٹروے نوازشریف بنا رہاہے ۔انہوں نے کہا کہ عمران کان کہتا تھا کہ بجلی کے کارخانے لگائیں گے اور دوسرے صوبوں کو بجلی فراہم کریں گے ،اب پوچھیں اس لاڈلے سے کہ کتنے کارخانے لگائے ہیں ،کتنے میگا واٹ بجلی بنائی ہے، ساری بجلی مسلم لیگ نے بنائی ہے ۔
سابق وزیراعظم کا کہناتھا کہ تین دن پہلے ان کا شو دیکھا تھا لاہور میں ،سب لیڈر اکھٹے ہو گئے ،جو ایک دوسرے کو گالیاں دیتے ہیں ،ایک دوسرے پر جوتے برساتے ہیں ،ایک ہی صف میں کھڑے ہو گئے ،ان کے اصولوں کی سیاست کہاں گئی،آج جو آپ یہاں بیٹھے ہیں یہ مجمعہ اس سے دس گنا زیادہ بڑا ہے،وہ بھی ایک مجمعہ تھا لیکن خالی کرسیوں کا ،یہاں ایک بھی کرسی خالی نہیں بلکہ یہ سارے بچاے کھڑے ہیں۔
نوازشریف کا کہناتھا کہ عمران خان پارلیمنٹ پر لعنت بھیجتا ہے ،میں نے پہلے بھی کہا تھا کہ جس تھالی میں کھاتا اسی میں چھید کرتاہے ،اسی اسمبلی کو لعنت بھیجتاہے جس کیلئے الیکشن لڑتاہے ،جہاں سے یہ تنخواہ لیتاہے ،اس آدمی نے ہر ایک کو گالیاں دی ہیں اور الزامات لگائے ہیں ، ہر ایک کے خلاف زبان دراز کی ہے ،اوئے آئی جی ،اوئے فلاں میں تمہیں جیل میں ڈال دوں گا،اللہ نے جاچاہا تو تم خود جیل میں جاﺅ گے ،قومی اخلاق کو بگاڑ کر رکھ دیاہے ،ایسا کوئی سیاستدان منظور نہیں ہے ہمیں۔
انہوں نے کہا کہ میں لاہور کی عوام کو دل کی گہرائی سے آپ کے سامل کر انہیں شاباش دینا چاہتاہوں جنہوں نے عمران خان کو اس کی اصل شکل دکھا دی ہے ،اس کی اوقات بتا دی ہے ۔نوازشریف کا کہناتھا کہ میں سلام پیش کرتاہوں ان معزز ججوں کو جنہوں نے اسے صادق اور مین قرار دیا،اس نے مانا اور اقبال جرم کیا ہاں یہ نیازی سروسز میری کمپنی ہے ،لاکھوں پاﺅنڈ اس کے اندر ہیں اور بنی گالہ کے لیے چار چار مرتبہ بیانات بدلے ،وہ جج اس کے بعد کہتے ہیں نیازی صاحب یہ آپ نہیں کہ رہے وہ کوئی اور نیازی جس کی یہ نیازی کمپنی ہے
سابق وزیراعظم کا کہناتھا کہ اللہ کے کرم سے یہ لواری ٹنل ہم نے بنائی ہے ،چترال والوں سے پوچھو کتنے خوش ہیں وہ لوگ ،میں آپ کو بتانا چاہتاہوں کہ اب ہری پور سے اسلام آباد کا سفر آدھا ہو گیاہے اور ابھی یہ موٹر وے ایبٹ آباد جارہی ہے ، یہی مانسہرہ جا رہی ہے اور چائنہ باڈر تک بن رہی ہے ،آپ اسلام آباد کے قریب آگئے ہیں ،آپ لاہور کے قریب آ گئے ہیں ،لاہور سے آگے کراچی تک چھ لین موٹر وے بن رہی ہے۔
انہو ںنے کہا کہ نوازشریف کوئی بات کہتاہے اسے پورا کرتاہے ،میں وعدہ کرنے لگا ہوں اور اس کی 2018 تجدید کروں گا اگر آپ نے ن لیگ کو ووٹ دیا تو صرف یہ موٹروے نہیں بنے گابلکہ ہر شہر سے موٹروے گزرے گا ،نوازشریف یہ وعدہ بھی کرتاہے کہ دن رات کام کروں گا ،آندھی ہو طوفان ہو یا دھوپ ہو میں آپ کے ساتھ قدم سے قدم ملا کر چلوں گا ،بے روزگاری کو ہم ختم کریں گے ،میں آپ سے پوچھنا چاہتاہوں کہ اگر آپ یہ فیصلہ منظور ہے کہ نہیں ؟ اگر نوازشریف نے ایک روپیہ بھی کھایا ہو تو میں حاضر ہے ، اگر نوازشریف نے امانت میں خیانت نہیں کی تو پھر آپ کو اپنا فیصلہ واپس لینا ہوگا ،،آپ کے ووٹ کی پرچی کو پھاڑ کے پھینک دیا جاتا ہے اور آپ کے ووٹ کا کوئی احترام نہیں ہوتا ،عوام جس کو لاتے ہیں وہی اسے واپس لے جائیں گے ، کسی میں یہ دم نہیں ہونا چاہیے کہ عوام کے فیصلے کو پاﺅں تلے روندے۔
نوازشریف کا کہناتھا کہ انصاف کے دو معیار نہیں ہوں گے ،ایک ترازو ہوگا ،چاہے کوئی غریب ہے یا کوئی امیر سب کیلئے برابر سلوک ہو گا ،اس قانون کے مطابق یہ ملک چلے گا،جن لوگوں کے پاس گھر نہیں ہے ،جن کے پاس چھت نہیں ہے ان کو کمرہ دینا چھت دینا اس کو میں اپنے ذمے لوں گا ،اللہ نے توفیق دی تو بے گھروں کو گھر دیے جائیں گے ،جو لوگ بے چارے نتخواہ لیتے ہیں اور اس میں سے آدھی یا پونی تنخواہ کرائے میں دے دیتے ہیں اور ایک چوتھائی میں گزارہ کرتے ہیں تاہم اب وہ کرائے میں خرچ ہونے والے پیسے سے قسط ادا کریں گے اور پانچ یا دس سالوں میں یہ گھر ان کی ملکیت ہو جائے گی۔


اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.