ملازمتوں کے مواقع پیدا کرنے کیلئے حکومت کا نیا اقدام

وفاقی وزیرِخزانہ اسد عمرکہتے ہیں  کہ ہماری  حکومت پاکستان میں غیر ملکی سرمایہ کاری کو متوجہ کرنے کی کوشش کر رہی ہے جس سے ملازمتوں کے مواقع پیدا ہوں گے۔اوورسیز انوسٹرز چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری (او آئی سی سی آئی) کے اجلاس کے دوران بات کرتے ہوئے وزیرِ خزانہ نے کہا کہ ان کی حکومت برآمدات میں اضافے سے متعلق قلیل مدتی اور درمیانی مدتی سرمایہ کاری کی جانب بڑھ رہی ہے۔ان کا کہنا تھا کہ اس اقدام کی وجہ سے ملکی معیشت کی حالت بہتر ہوگی اور نوجوانوں کے لیے ملازمتوں کے مواقع بھی پیدا ہوں گے۔انہوں نے تصدیق کی کہ حکومت اب بیلنس آف پیمنٹ کے بحران سے آگے آچکا ہے، اور اس وقت بحالی کے راستے پر گامزن ہے۔وفاقی وزیرِ خزانہ کا مزید کہنا تھا کہ ملک کی نظر ثانی شدہ اقتصادی حکمت عملی کے ثمرات آئندہ 6 ماہ میں نظر آنے لگ جائیں گے۔انہوں نے سرکاری کمپنیوں کی بحالی کے لیے ایک ماڈل کپمنی بنانے سے متعلق بھی وضاحت پیش کی۔وفاقی وزیر کا کہنا تھا کہ حکومت بہت جلد پرائیویٹ سیکٹر سے بھی پاک چین اقتصادی راہداری (سی پیک) منصوبے سے فائدہ اٹھانے کے لیے رابطے کرے گی۔انہوں نے او آیئی سی سی آئی کے اراکین کو اپنے خطاب کے دوران یقین دہانی کروائی کہ حکومت رواں مالی سال کے دوران ٹیکس ریفنڈ، بڑھتے ہوئے گردشی قرضوں اور ترسیلاتِ زر سے متعلق تاجروں کے خدشات کو دور کرنے کے لیے اقدامات کرے گی۔اس موقع پر او آئی سی سی آئی کے صدر عرفان وہاب خان کا کہنا تھا کہ چیمبر بہت جلد جامع او آئی سی سی آئی ڈیجیٹل پاکستان کی تجاویز حکومت کے ساتھ شیئر کرے گی تاکہ ملک کو ڈیجیٹل دور میں لے جایا جائے۔


اپنی راہےکااظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.